غیر قانونی تجاوزات، جامعہ حفصہ کو جاری کردہ نوٹس واپس


اسلام آباد: کیپیٹل ڈیولپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) کی طرف سے جامعہ حفصہ کو غیر قانونی تعمیرات پر جاری کردہ نوٹس واپس لے لیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق سی ڈی اے نے ضلعی انتظامیہ کی مداخلت پر مدرسے کو جاری کردہ نوٹس واپس لے لیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ضلعی انتظامیہ کے حکام کا مدرسہ انتظامیہ سے رابطہ ہوا۔ ضلعی انتظامیہ کی جانب سے لال مسجد کے خطیب مولانا عبدالعزیز کے وکیل طارق اسد ایڈووکیٹ اور حافظ احتشام احمد کو اس سے متعلق آگاہ بھی کر دیا گیا ہے۔ ضلعی انتظامیہ نے یقینی دہانی کروائی ہے کہ سی ڈی اے کی طرف سے نوٹس منسوخی کا تحریری نوٹس مدرسہ انتظامیہ کو بھیج دیا جائیگا۔ مدرسہ انتظامیہ نے  سی ڈی اے اور اسلام آباد انتظامیہ کے فیصلے کا خیرمقدم کیا۔ مدرسہ انتظامیہ نے کہا کہ افہام و تفہیم سے ہی تمام اختلافی امور حل کرنے کے خواہشمند ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: غیر قانونی تجاوزات و تعمیرات، جامعہ حفصہ کو نوٹس جاری

واضح رہے کہ گزشتہ روز کیپیٹل ڈیولپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) کی جانب سے جامعہ حفصہ کی انتظامیہ کو جاری کیے جانے والے ایک نوٹس جاری کیا گیا تھا جس میں انکشاف کیا گیا تھا ہے کہ سیکٹر جی سیون میں مسجد الفلاح سے متصل بچوں کے پارک پر ناجائز طور پر مدرسے کی عمارت تعمیر کرنے کے ساتھ ساتھ سی ڈی اے کی سرکاری اراضی پر قبضہ کیا گیا ہے۔ مراسلے میں مدرسے کی انتظامیہ کو حکم دیا گیا تھا کہ وہ ازخود پندرہ روز میں تمام تعمیرات ختم کردے وگرنہ کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔


Leave A Reply

Your email address will not be published.