چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے اپنا آخری مقدمہ نمٹا دیا


اسلام آباد: چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے آج سپریم کورٹ میں بطور چیف جسٹس اپنے آخری مقدمے کی سماعت کی۔ یاد رہے کہ چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ آج رات 12 بجے ریٹائر ہو جائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق مری میں آمنہ بی بی پر فائرنگ سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ یہ میرے عدالتی کیرئیر کا آخری مقدمہ ہے۔ چیف جسٹس نے سب کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔

مدعیہ آمنہ بی بی کے وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ ملزمان ساجد، راشد اور قدیر تینوں نے گھر میں جاکر فائرنگ کی۔ چیف جسٹس نے کہا کہ آمنہ بی بی جب عدالت میں پیش ہوئیں تھی تو انہوں نے ملزمان کی ضمانت سے اعتراض نہیں کیا تھا۔ انہیں بیان دینے سے پہلے سوچنا چاہیے تھا۔ لگتا ہے ضمانت کے بعد معاملات خراب ہوئے۔ مدعیہ کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہ کہ آمنہ بی بی کو جو گولیاں لگیں انکے چھرے جسم کے اندر ہیں اور وہ ہسپتال میں ہیں۔ چیف جسٹس نے کہا کہ وکیل صاحب سوچ لیں ضمانت کے خلاف آئے ہیں، معاملات خراب نہ ہو جائیں۔ چیف جسٹس نے مزید کہا کہ ہم معاملے پر کوئی رائے نہیں دے رہے کیونکہ ابھی ٹرائل چل رہا ہے۔ بعد ازاں عدالت نے معاملہ نمٹا دیا۔

واضح رہے کہ چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ آج ریٹائر ہو جائیں گے۔ چیف جسٹس کے اعزاز میں فل کورٹ ریفرنس آج دن 11 بجے منعقد ہوگا۔ جبکہ آج رات کو سپریم کورٹ کی جانب سے چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کے اعزاز میں عشائیہ بھی دیا جائے گا۔

جسٹس آصف سعید کھوسہ نے 18 جنوری 2019 کوبطور  26 ویں چیف جسٹس اپنے عہدے کا حلف لیا۔ واضح رہے کہ جسٹس آصف سعید کھوسہ کے بعد سب سے سینئر جج جسٹس گلزار احمد کو اگلا چیف جسٹس نامزد کیا گیا تھا۔ جسٹس گلزار احمد کل 27 ویں چیف جسٹس کے طور پر اپنے عہدے کا حلف اٹھائیں گے۔


Leave A Reply

Your email address will not be published.