بجلی اور گیس کی لوڈ شیڈنگ سے عوام کی چیخیں نکل گئیں

Gas-Load-Shedding

اسلام آباد: ملک بھر میں جاری بجلی و گیس کی لوڈ شیڈنگ نے عوام کی چیخیں نکال دی ہیں۔ گھروں میں چولہے تک بجھ چکے ہیں جبکہ عوام الناس کی بڑی تعداد کو اپنے روزہ مرہ کے کام کاج نمٹانے میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق گیس کمپنیوں کو 2 ارب کیوبک فٹ گیس یومیہ کے شارٹ فال کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے پنجاب بھر میں سی این جی سٹیشنز کو بھی گیس کی سپلائی بند کر دی گئی ہے جبکہ پاور پلانٹس کو گیس کی سپلائی نصف کر دی گئی۔

گیس کی عدم دستیابی کے باعث متعدد پاور پلانٹس بھی بند کر دیئے گئے ہیں۔ تربیلا ڈیم میں بجلی پیدا کرنے والے 11 یونٹ بند کر دیئے گئے۔ تربیلاڈیم سے صرف 600 میگاواٹ بجلی پیدا ہو رہی ہے۔ تربیلا کے چوتھے توسیعی منصوبے سے بھی بجلی کی  پیداوار بند کر دی گئی۔ سرکاری تھرمل پاور پلانٹس 2 ہزار میگا واٹ بجلی پیدا کر رہے ہیں۔

نجی شعبے کے بجلی گھروں کی پیداوار 8 ہزار میگاواٹ تک ریکارڈ کی گئی ہے۔ بجلی کے نظام کو 3 ہزار میگاواٹ شارٹ فال کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ کھاد فیکٹریوں اور عام صنعتوں کے لیے بھی گیس کی لوڈ شیڈنگ شروع کردی گئی ہے

متعلقہ خبریں

Leave a Comment