احسن اقبال کی گرفتاری، نیب نیازی گٹھ جوڑ: شہباز شریف

لندن: پاکستان مسلم لیگ ن کے سیکرٹری جنرل احسن اقبال کی گرفتاری پر ردِ عمل دیتے ہوئے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قائد حزب اختلاف شہبازشریف نے اس گرفتاری کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق احسن اقبال کی گرفتاری پر سابق وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف کی طرف سے جاری کردہ بیان میں اس گرفتاری کو بلاجواز قرار دیتے ہوئے اسے نیب نیازی گٹھ جوڑ کا ایک ثبوت قرار دے دیا گیا ہے۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ چین پاکستان کی دوستی اور سی پیک کو مضبوط بنانے والے شخص کی گرفتاری قابل مذمت اور افسوسناک ہے۔ ان کے مطابق نوازشریف کی پاکستان کی خدمت کرنے والی شاندار ٹیم کے ایک اور رکن کی گرفتاری اچھی روایت نہیں۔

ان کے مطابق احسن اقبال کی گرفتاری کا مقصد حکومت کی نالائقی اور نااہلی کو عوام کے سامنے بے نقاب ہونے سے روکنا ہے۔ احسن اقبال پارٹی کی تنظیم نو اور ملک بھر میں عوام کے مسائل کو اجاگر کرنے کے لئے سیاسی سرگرمیاں کررہے تھے۔ جس ادھورے منصوبے کو مکمل کرنے پر احسن اقبال کو شاباش ملنا چاہئے تھی، اس میں ان کی گرفتاری سیاسی انتقام کی بدترین مثال ہے۔

سابق وزیر اعلی کا مزید کہنا تھا کہ عمران نیازی حکومت سیاسی انتقام میں اندھی ہوچکی ہے۔ جن لوگوں نے عوام اور پاکستان کی ایمانداری، محنت اور قومی جذبے سے خدمت کی، انہیں گرفتار کرکے اچھا پیغام نہیں دیاجارہا۔

شہباز شریف نے کہا کہ نوازشریف کا ہر سپاہی، ہر کارکن اور ہر ٹیم ممبر نیب نیازی گٹھ جوڑ سے گھبرا کر سچ بولنے سے باز نہیں آئے گا۔ حکومت کی سی پیک، عوام اور پاکستان دشمن پالیسیوں کو بے نقاب کرتے رہیں گے۔ کوئی جیل، کوئی جھوٹامقدمہ اور کوئی نیب نیازی گٹھ جوڑ ہمیں عوام کے حقوق کادفاع کرنے سے نہیں روک سکتا۔

شہباز شریف کے مطابق حکومت ملک اور وعوام کے مفادات کے تحفظ میں ناکام ہوچکی ہے اس لئے سیاسی انتقام کے ذریعے توجہ ہٹانے میں مصروف ہے۔ حکومت سیاسی مخالفین پر جھوٹے مقدمے بنانے اور جیل بھجوانے کے بجائے اہم قومی اور عوامی مسائل پر توجہ دے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment