الجزائر کے بااثر آرمی چیف احمد قائد انتقال کر گئے

الجزائر: شمالی افریقی ملک الجزائر کے بااثر آرمی چیف احمد قائد صالح دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کر گئے ہیں۔ 80 سالہ صالح نے اس سال کے دوران الجزائر کی سیاسی عدم استحکام سے بحرانی صورت حال میں کلیدی کردار ادا کیا تھا۔

الجزائر کےسرکاری ٹی وی سے ملنے والی اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ قائد صالح آج پیر کے روز اچانک دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کر گئے۔ وہ آج صبح اپنے گھر پر تھے کہ انہیں ہارٹ اٹیک ہوا، جس پر انہیں دارالحکومت الجزائر کے فوجی ہسپتال پہنچا دیا گیا، جہاں ان کا انتقال ہو گیا۔

ملکی صدر کے دفتر کے جاری کردہ ایک بیان کے مطابق نومنتخب ریاستی صدر عبدالمجید تبون نے جنرل قائد صالح کی اچانک موت پر ملک میں تین روزہ قومی سوگ کا اعلان کر دیا ہے۔ الجزائر کی فوج سرکاری طور پر قائد صالح کی موت کا سوگ سات روز تک منائے گی۔

صدر تبون کے مطابق جنرل احمد قائد صالح کی موت موجودہ حالات میں الجزائر کے لیے ایک بہت ہی تکلیف دہ اور بڑا نقصان ہے۔ صدر تبون نے جنرل سعید شنقریحہ کو ملکی افواج کا قائم مقام سربراہ نامزد کر دیا ہے۔

جنرل قائد صالح نے اس سال اپریل میں اس وقت کے ملکی صدر عبدالعزیز بوتفلیقہ کے وسیع تر عوامی احتجاجی مظاہروں کے تناظر میں منصب صدارت سے مستعفی ہو جانے میں کلیدی کردار ادا کیا تھا۔ ایسا زیادہ تر جنرل صالح کی طرف سے دباؤ کے بعد ہی ممکن ہوا تھا کہ طویل عرصے تک اقتدار میں رہنے والے اور کافی عرصے سے بیمار چلے آ رہے عبدالعزیز بوتفلیقہ آخرکار صدارتی عہدے سے مستعفی ہونے پر آمادہ ہوئے تھے۔

صدر بوتفلیقہ کے خلاف اس سال فروری میں عوامی مظاہرے شروع ہو جانے کے بعد ملک کی بہت بااثر مسلح افواج کے سربراہ کے طور پر جنرل صالح نے یہ مطالبہ کر دیا تھا کہ ریاستی آئین کی ایک متعلقہ شق پر عمل کرتے ہوئے خرابی صحت کی بناء پر صدر بوتفلیقہ کو صدارتی عہدے سے ہٹانے کے لیے کارروائی شروع کی جانا چاہیے۔

جنرل احمد قائد صالح کے بارے میں یہ بھی بات اہم ہے کہ ان کی عمر تو 80 برس تھی مگر وہ پھر بھی ملکی بری فوج اور مسلح افواج دونوں کے سربراہ تھے۔ انہوں نے سابق سوویت یونین کی ایک مشہور فوجی اکیڈمی سے عسکری تربیت حاصل کی تھی اور انہیں 1994ء میں الجزائر کی بری فوج کا سربراہ مقرر کیا گیا تھا۔

جنرل احمد قائد صالح الجزائر کے مشرقی صوبہ بٹن میں 13 جنوری ، 1940 کو پیدا ہوئے. جنرل صالح نے یکم نومبر 1954 سے 19 مارچ 1962 کے درمیان فرانسیسی نوآبادیاتی حکمرانی کے خلاف الجزائر کی جدوجہد میں حصہ لیا۔

Leave a Comment