پولیو کا خاتمہ، حکومت کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے

فائل فوٹو

اسلام آباد: ملک میں پولیو کا خاتمہ کرنے والوں کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے۔2018  میں 12 پولیو کیس رپورٹ ہوئے اور 2019 میں 111 پولیو کیسز سامنے آگئے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان میں پولیو کے کیسز کم ہونے کے بجائے بڑھنے لگے ہیں۔ 2019 کی پولیو رپورٹ کے مطابق پورے سال کے دوران پولیو کے 111 نئے کیسز رپورٹ کیے گئے ہیں۔ سب سے زیادہ کیس صوبہ خیبر پختونخواہ میں رپورٹ کیے گئے، جہاں پولیو کے 79 کیس سامنے آئے۔ سندھ میں 17 پولیو کیسز، پنجاب میں 6 اور بلوچستان میں 17 کیسز رپورٹ کیے گئے ہیں۔ یاد رہے کہ 2019 کی شروعات میں ہی ملک کے چار ڈسٹرکٹس میں 4 پولیو کے کیسز سامنے آئے تھے۔

واضح رہے کہ 18 اکتوبر کو وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے انسداد پولیو بابر بن عطا اپنے عہدے سے مستعفی ہو گئے تھے۔ سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر بابر بن عطا کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا تھا کہ انہوں نے ذاتی وجوہات کی بنیاد پر استعفیٰ دیا۔ پاکستان تحریک انصاف کے سوشل میڈیا ونگ کے رکن بابر بن عطا کو اکتوبر 2018 میں وزیراعظم کا فوکل پرسن برائے انسداد پولیو مہم تعینات کیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ عالمی ادارہ صحت بے تحاشہ پولیو کیسز رجسٹرڈ ہونے کے سبب پاکستان پر پہلے سے عائد سفری پابندیوں میں بھی توسیع کرچکا ہے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment