عوام پر ایک بار پھر بجلی بم گرا دیا گیا


اسلام آباد: نیپرا نے ایک بار پھر عوام پر بجلی مہنگائی کا بم گراتے ہوئے بجلی کی قیمتوں میں 1 روپے 56 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دے دی ہے۔ بجلی کی اضافی مہنگائی سے صارفین پر ساڑھے  14 ارب روپے کا اضافی بوجھ پڑے گا۔ اضافے کا اطلاق کے الیکٹرک اور لائف لائن صارفین پر نہیں ہو گا

نیپرا کے مطابق قیمت میں اضافہ اکتوبر کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں کیا گیا ہے۔  اکتوبر میں بجلی کی پیداوری لاگت 5.32 روپے فی یونٹ رہی۔ اکتوبر میں ریفرنس فیول لاگت 3.75 روپے فی یونٹ تھی۔ فیصلے کا اطلاق کے الیکٹرک کے صارفین پر نہیں ہو گا۔ سی پی پی اے حکام کے مطابق  گیس نہ ہونے کی وجہ سے فرنس آئل سے بجلی پیدا کر رہے ہیں۔ پاور سیکٹر کی گیس ڈیمانڈ 300 ایم یم سی ایف ڈی ہے۔

پاور سیکٹر کے ذرائع کے مطابق سیکٹر کو صرف 180 ایم ایم سی ایف ڈی گیس مل رہی ہے۔ سردیوں میں پن بجلی بھی بہت کم پیدا ہو رہی ہے۔ دوسری طرف نیپرا نے بجلی کے ترسیلی نظام پر بھی تحفظات کا اظہار کر دیا ہے۔ نیپرا حکام کی جانب سے کہا گیا ہے کہ جتنا زور پاور پلانٹس پر لگایا گیا ترسیلی نظام پر اتنی توجہ نہیں دی گئی۔


Leave A Reply

Your email address will not be published.