ملک بھر میں گیس و بجلی کا بحران بڑھ گیا


اسلام آباد: گیس اور بجلی کا شارٹ فال بڑھنے سے ملک بھر میں شہری شدید مشکلات کا شکار ہو گئے ہیں۔ ذرائع وزارت توانائی کے مطابق بجلی کا شارٹ فال 3 ہزار میگا واٹ تک پہنچ گیا۔ دوسری طرف  گیس سسٹم کو 2 ارب 48 کروڑ کیوبک فٹ گیس کمی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ جبکہ گیس کی مجموعی طلب 6 ارب 50 کروڑکیوبک فٹ ہے۔ ذرائع کے مطابق گیس کی مقامی پیداوار میں 59 کروڑ 60 لاکھ کیوبک فٹ کمی آئی ہے۔ مقامی سطح پرگیس کی پیداوار 4 ارب کی بجائے 3 ارب 40 کروڑ کیوبک فٹ ہے۔

 گیس کی کمی کے پیش نظر پاور پلانٹس کو گیس کی فراہمی دو تہائی کم کردی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق پاور پلانٹس کو 30 کروڑ کیوبک فٹ گیس کی بجائے صرف 18 کروڑ کیوبک فٹ گیس فراہم کی ‏جارہی ہے۔

 ادھر تربیلا ڈیم سے بجلی کی پیداوار صرف 200 میگاواٹ رہ گئی۔ تربیلا ڈیم میں بجلی پیدا کرنے والے 14 یونٹ بند ہیں۔ جبکہ منگلا ڈیم سے بھی 200 میگاواٹ بجلی پیدا ہو رہی ہے۔ پن بجلی کی  مجموعی  پیداوار 700 میگاواٹ تک ہے۔ سرکاری تھرمل پاور پلانٹس 2500 میگا واٹ بجلی پیدا کر رہے ہیں جبکہ نجی شعبے کے بجلی گھروں کی پیداوار 7800 میگاواٹ ہے۔ گیس نہ ہونے کے باعث بجلی کی طلب 14 ہزار میگا واٹ ہوگئی جس کے مقابلے میں بجلی کی مجموعی پیداوار 11 ہزار میگا واٹ ہے۔ ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ ملک بھر میں 5 گھنٹے تک  غیر اعلانیہ بجلی لوڈ شیڈنگ کی جارہی ہے۔

ملک کے معاشی حب کراچی کو بھی گیس کے سنگین بحران سے گزرنا پڑ رہا ہے جہاں سی این جی اسٹیشنز کو کھولے جانے کے بعد صرف آٹھ گھنٹے کے لیے کھولا گیا۔ گیس کے حصول کے لیے سی این جی اسٹیشنز پر انتظار کرتے عوام الناس گیس کی عدم دستیابی کا رونا روتے نظر آئے۔


Leave A Reply

Your email address will not be published.