آرمی ایکٹ میں ترمیم؛ حکومتی وفد کی پیپلز پارٹی سے ملاقات


اسلام آباد: آرمی ایکٹ میں ترمیم پر اپوزیشن کی حمایت حاصل کرنے کے لیے تین رکنی حکومتی وفد نے پاکستان پیپلزپارٹی کی قیادت سے ملاقات کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق حکومتی وفد نے  وفاقی وزیر پرویز خٹک کی سربراہی میں پیپلز پارٹی کے وفد سے ملاقات کی ہے۔  وفد میں قاسم سوری اور علی محمد خان شامل تھے۔ حکومتی وفد نے پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کو آرمی ایکٹ کے حوالے سے قانون سازی سمیت اس سے متعلقہ صورت حال پر بریفنگ دی۔پاکستان پیپلزپارٹی کی جانب سے ملاقات کرنے والوں میں راجہ پرویزاشرف، نیربخاری، شیری رحمان، رضا ربانی، شازیہ مری اور نوید قمر بھی شامل تھے۔ پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے ملاقات کے دوران تشویش کا اظہار کیا کہ آرمی ایکٹ پر ممکنہ قانون سازی کے تناظر میں پارلیمانی قواعد وضوابط پر عمل نہیں کیا جا رہا۔ پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے حکومتی وفد کے اراکین سے کہا کہ آرمی ایکٹ پر قانون سازی کے سلسلے میں پارلیمانی قواعد و ضوابط کو بروئے کار لایا جائے۔ پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے سماجی رابطے کی ایک ویب سائٹ پر اپنے پیغام میں کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی جمہوری قانون سازی کو مثبت طریقے سے کرنا چاہتی ہے، جبکہ کچھ سیاسی جماعتیں قانون سازی کے قواعد و ضوابط کو بالائے طاق رکھنا چاہتی ہیں۔ پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین کا کہنا تھا کہ جتنی اہم قانون سازی ہے، اتنا ہی اہم ہمارے لئے جمہوری عمل کی پاسداری ہے۔ انہوں نے بتایا کہ پاکستان پیپلزپارٹی اس معاملے پر دوسری سیاسی جماعتوں کو بھی اعتماد میں لے گی۔

ملاقات کے بعد اپنے بیان میں چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ حکومتی اراکین متوقع قانون سازی پربات چیت کیلئے زرداری ہاؤس آئے تھے، ہم نے انہیں بتایا کہ پیپلزپارٹی جمہوری قانون سازی کو مثبت طریقے سے کرنا چاہتی ہے۔ بلاول نے بتایا کہ کچھ سیاسی جماعتیں قانون سازی کے قواعد و ضوابط کو بالائے طاق رکھنا چاہتی ہیں۔جتنی اہم قانون سازی ہے، اتنا ہی اہم ہمارے لیے جمہوری عمل کی پاسداری ہے۔ بلاول نے کہا کہ پیپلزپارٹی اس معاملے پر دوسری سیاسی جماعتوں کو بھی اعتماد میں لے گی۔

واضح رہے آج ہی حکومتی وفد نے پاکستان مسلم لیگ ن کے ایک وفد سے ملاقات کی تھی۔ پاکستان مسلم لیگ ن بھی اس بل پر اپنی غیر مشروط حمایت کا اعلان کر چکی ہے۔

 

آئی ڈی: 2020/01/02/2132 

Leave A Reply

Your email address will not be published.