قومی شاہراہوں پر نئے جرمانوں کا نفاذ، ٹرانسپورٹرز ہڑتال پر چلے گئے


لاہور: موٹر وے پولیس کی جانب سے قومی شاہراہوں پر جرمانوں کی نئی شرح کا نفاذ ہونے پر پاکستان پبلک اینڈ گڈز ٹرانسپورٹرز الائنس نے ملک گیر پہیہ جام ہڑتال شروع کر دی ہے۔ الائنس نے مطالبات پورے نہ ہونے کی صورت میں گورنر ہاوس کے سامنے دھرنا دینے کا بھی عندیہ دے دیا ہے۔

لاہور سمیت ملک بھر میں ٹرانسپورٹ کی بندش سے مسافروں کو مشکلات کا سامنا ہے۔ ٹرانسپورٹرز کی ہڑتال سے لاہور کے علاوہ ملک کے دوسرے شہروں میں اشیائے خوردونوش کی شدید قلت کاخدشہ پیدا ہو گیا۔

تفصیلات کے مطابق موٹروے پولیس کی جانب سے قومی شاہراہوں پر نئے جرمانے کا نفاذ ہو چکا ہے جس پر پاکستان پبلک اینڈ ٹرانسپورٹرز الائنس نے ملک گیر ہڑتال شروع کر دی ہے۔ ٹرانسپورٹرز نے موٹروے، نیشنل ہائی ویز پر جرمانوں اور ٹول ٹیکس میں اضافہ واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ گڈز ٹرانسپورٹرز الائنس کا دوسرا مطالبہ ہے کہ قومی شاہراہوں پر کسٹمز کی لوٹ مار بند کی جائے۔ الائنس کے مطابق ہیوی ڈرائیونگ لائسنس کی حصول بے حد مشکل بنا دیا گیا ہے اسے  آسان بنایا جائے۔

منی مزدا الائنس نے آج لاہور کے 12 مختلف پوائنٹس سے احتجاجی ریلیاں نکالنے کا اعلان کر رکھا ہے۔ شہر بھر سے ریلیاں لبرٹی چوک میں اکٹھی ہو کر گورنر ہاؤس جائیں گی۔ ٹرانسپورٹرز کا کہنا ہے کہ گورنر ہاؤس کے باہر مطالبات کی منظوری کیلئے دھرنا ہو گا۔

 

آئی ڈی: 2020/01/02/2053 

Leave A Reply

Your email address will not be published.