جنرل قاسم سلیمانی کی ہلاکت۔۔ مائیک پومپیو اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ میں رابطہ


راولپنڈی: ترجمان پاک فوج میجر جنرل آصف غفور نے ٹوئیٹر پر بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ اور امریکی سیکرٹری برائے دفاع مائیک پومپیو میں رابطہ ہوا ہے۔ اس رابطے میں خلیجی خطے میں حالیہ واقعے کے پس منظر میں بڑھنے والی حدت کے ممکنہ اثرات پر بات کی گئی۔

ترجمان پاک فوج نے مزید کہا کہ چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے اس موقع پر تحمل اور مثبت بات چیت کا طریقہ کار اختیار کرنے پر زور دیا تاکہ امن و سلامتی کے حصول کے لیے اس صورتحال کی حدت کو کم کیا جا سکے۔

میجر جنرل آصف غفور کے مطابق جنرل قمر جاوید باجوہ نے بات چیت میں افغانستان میں جاری امن کے عمل کی کامیابی کے لیے اس پر توجہ مرکوز رکھنے کے عزم کا اعادہ کیا۔

ڈی جی آئی ای

اس سے قبل امریکی سیکرٹری برائے دفاع مائیک پومپیو نے ٹوئیٹر پر اپنے بیان میں کہا تھا کہ ان کی پاکستان کے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے بات ہوئی ہے۔ اس بیان میں انہوں نے ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کی ہلاکت کو ”دفاعی کارروائی” قرار دے دیا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ایران کی حکومت خطے کے استحکام کو متاثر کر رہی ہے۔ انہوں نے امریکی مفادات کے تحفظ پر سمجھوتہ نہ کرنے کا اظہار بھی کیا۔

واضح رہے گزشتہ شب گئے امریکی صدر ٹرمپ کی جانب سے جاری کردہ حکم پر ایران کے طاقتور ترین جنرل اور ایران کی دوسری اہم ترین شخصیت جنرل قاسم سلیمانی کو ایک میزائل حملے میں شہید کر دیا۔ اس حملے میں کل سات افراد کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کی گئی۔

اس کارروائی کے جواب میں ایران میں تین روزہ سوگ کا اعلان کر دیا گیا اور ایرانی صدر نے اس کا بدلہ لینے کا اعلان کر دیا۔

واضح رہے حال ہی میں عراق میں امریکی سفارتخانے پر ایک حملہ ہوا۔ صدر ٹرمپ نے اس حملے کی ذمہ داری ایران پر عائد کرتے ہوئے ایران کو دھمکی دی تھی کہ ایران اس کا نتیجہ بھگتنے کو تیار رہے۔

 

آئی ڈی: 2020/01/03/2220 

Leave A Reply

Your email address will not be published.