سکھر میں منہدم ہونے والی عمارت کی ہلاکتیں 8 ہو گئیں


سکھر: سکھر میں تین روز قبل حسینی روڈ پر منہدم ہونے والی تین منزلہ رہائشی عمارت کے ملبے سے مزید 2 لاشیں نکال لی گئیں جس سے جاں بحق ہونے والے افراد کی کل تعداد 8 ہو گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق حسینی روڈ سکھر پر زمین بوس عمارت کے ملبے سے آج مزید دو لاشیں نکال لی گئیں۔ جاں بحق ہونے والی خاتون کی شناخت صبا زوجہ محمد علی کے نام سے ہوئی ہے۔

سکھر میں رونما ہونے والے اس افسوس ناک واقعے میں جاں بحق افراد کی تعداد 8 ہو چکی ہے۔ پاک فوج کے دستے اور متعلقہ ادارے ریسکیو کارروائیوں میں بدستور مصروف ہیں۔ ریسکیو ذرایع کا کہنا ہے کہ عمارت گرنے سے زخمی ہونے والے 18 افراد کی حالت خطرے سے باہر ہے۔ دوسری طرف جاں بحق ہونے والے 6 افراد کی اجتماعی نماز جنازہ بھی ادا کر دی گئی ہے۔

واضح رہے کہ تین دن قبل سکھر کے گنجان آبادی والے علاقے حسینی روڈ پر واقع ایک تین منزلہ رہائشی عمارت اچانک گر گئی تھی۔ منہدم ہونے والی بلڈنگ میں ایک ہی خاندان کے کئی گھرانے رہائش پذیر تھے۔ عمارت کے گراؤنڈ فلور پر الماری کی 2 دوکانیں بھی تھیں جس میں موجود افراد بھی عمارت کے منہدم ہونے کی وجہ سے ملبے تلے دب گئے تھے۔

عمارت کے منہدم ہونے کے بعد شہریوں نے اپنی مدد آپ کے تحت چار افراد کو فوری طور پر زخمی حالت میں نکال کر سول اسپتال سکھر منتقل کیا تھا جب کہ ضلعی انتظامیہ کو پاس بھاری مشینری نہ ہونے کے باعث ریسکیو کے کام میں شدید مشکلات کا سامنا رہا، جس پر ڈی سی سکھر کو فوج طلب کرنی پڑی۔

 

آئی ڈی: 2020/01/03/2260 

Leave A Reply

Your email address will not be published.