عوام کی کمر پر ایک اور بوجھ لادنے کی تیاری۔۔ گیس ایک بار پھر مہنگی ہونے کا امکان

Gas-Load-Shedding

اسلام آباد: گیس کی قیمتوں میں حالیہ اضافے کے بعد حکومت کی جانب سے ایک بار پھر گیس کی قیمتوں میں مزید اضافے کی تیاری شروع کر دی گئی ہے۔ مشیر خزانہ نے اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس پیر کو طلب کر لیا ہے جس میں گیس 214 فیصد تک مہنگی کرنے کی سمری منظور کیے جانے کا امکان ہے۔

تفصیلات کے مطابق حکومت نے گیس کی قیمتوں میں مزید اضافے پر غور شروع کر دیا ہے۔ آئی ایم ایف کی شرائط کے مطابق گیس کی قیمتوں میں اضافے کی منظوری اقتصادی رابطہ کمیٹی سے لینے کی تیاری کی جا رہی ہے۔ مشیر خزانہ ڈاکٹر حفیظ شیخ نے ای سی سی کا اجلاس پیر کو طلب کرلیا ہے جس میں گیس کی قیمتوں میں 214 فیصد اضافے کی سمری پیش کیے جانے کا امکان ہے۔ واضح رہے کہ رواں مالی سال کے پہلے چھ ماہ میں گیس کی قیمتوں میں پہلے ہی 80 فیصد تک اضافہ کیا جا چکا ہے۔

ذرائع کے مطابق اقتصادی رابطہ کمیٹی کے اجلاس میں پانچ نکاتی ایجنڈے پر غور کیا جائے گا۔ اجلاس میں الیکٹرک پاور ایکٹ 1997 میں ترامیم کی سمری ایجنڈے میں شامل ہے، جب کہ پاکستان ٹورزم ڈویلپمننٹ اینڈومینٹ فنڈ کیلئے ایک ارب روپے کی ضمنی گرانٹ جاری کرنے کی سمری بھی پیش کی جائے گی۔ یوٹیلیٹی اسٹورز کارپوریشن کے 5 ارب روپے قرضے کی حکومتی ضمانت میں توسیع کی سمری بھی اجلاس میں پیش کی جائے گی۔ یاد رہے کہ یوٹیلیٹی اسٹورز کارپوریشن نے نیشنل بینک سے 5 ارب روپے قرض لیا ہوا ہے۔ ای سی سی اجلاس میں وزارت صنعت و پیداوار, سوئی سدرن کو گیس بلوں کی ادائیگی کیلئے فنڈز جاری کرنے کی سمری پیش کرے گی  جب کہ رزک گیس فیلڈ سے سوئی سدرن کو گیس فراہمی کی سمری کا جائزہ بھی لیا جائے گا۔

 

آئی ڈی: 2020/01/03/2229

متعلقہ خبریں

Leave a Comment