تحریک انصاف کی حکومت کے 500 روز مکمل؛ کارکردگی سامنے آ گئی


تحریک انصاف حکومت کے ابتدائی 500 روز مکمل ہوگئے ہیں۔ ذرائع کے مطابق ان پانچ سو دنوں میں عوام پر ڈیڑھ ہزار ارب روپے کا اضافی بوجھ ڈالا گیا ہے جبکہ قرضوں میں 10 ہزار 700 ارب روپے کا اضافہ ہوا ہے۔

تفصیلات کے مطابق 2018 کے الیکشن میں جیت کر مسندِ اقتدار پر فائز ہونے والی پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کو اقتدار میں آئے 500 دن گزر چکے ہیں۔ ان پانچ سو دنوں کی کارکردگی مایوس کن رہی۔ ان پانچ سو دنوں میں حکومت نے عوام سے کیا ریلیف واپس لیا اور کیا کامیابی حاصل کی، ذیل میں ملاحظہ کیجئے؛

  • مہنگائی 9 سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی،

  • بجلی 3 روپے 85 پیسے فی یونٹ مہنگی کی گئی،

  • گیس کے نرخوں میں 334 فیصد تک اضافہ کیا گیا،

  • پیٹرولیم مصنوعات 21 روپے 36 پیسے فی لیٹر تک مہنگی کی گئیں،

  • ایک ڈالر میں قریباً 32 روپے کا اضافہ ہوا،

  • شرح سود 7.50 فیصد سے بڑھ کر 13.25 فیصد ہوگئی،

  • بجٹ خسارہ سالانہ بنیاد پر ریکارڈ 3 ہزار 444 ارب روپے تک پہنچ گیا،

  • ایف بی آر کا ٹیکس شارٹ سالانہ بنیاد پر 318 ارب روپے ہو گیا،

  • حکومت نے 400 سے زیادہ وفاقی ترقیاتی منصوبے ختم کر دئیے،

  • زرمبادلہ کے ذخائر میں ایک ارب 35 کروڑ ڈالر کا اضافہ ہوا،

  • کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 73 فیصد کم ہوگیا۔

  • تجارتی خسارہ 34 فیصد کم ہوا،

  • مجموعی غیر ملکی سرمایہ کاری میں 1267 فیصد اضافہ ہوا۔

  • آئی ایم ایف کے ساتھ 6 ارب ڈالر قرض پروگرام کا معاہدہ کیا گیا۔

  • سعودی عرب نے پانچ سال کیلئے 21 ارب ڈالر سرمایہ کاری کے ایم او یوز کئے،

  • حکومت نے کفایت شعاری کے اقدامات کا آغاز کیا،

  • وزارتوں اور ڈویژنوں کے اخراجات میں 10 فیصد بچت کی گئی،

  • احساس پروگرام کے تحت نادار طبقوں کی فلاح و بہبود کے لیے اربوں روپے کے پروگرام شرو ع کئے گئے،

  • بے سہارا لوگوں کے لیے پناگاہیں قائم کی گئیں،

  • بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کا نیا سروے کرکے 8 لاکھ غیر مستحق لوگوں کو نکالا گیا،

  • بزنس کمیونٹی کے تحفظات دور کرنے کے لیے نیب تر میمی آرڈیننس جاری کیا گیا۔

 

آئی ڈی: 2020/01/04/2320 

Leave A Reply

Your email address will not be published.