ٹرانسپورٹرز اور حکومت کے مذاکرات کامیاب۔۔ بھاری جرمانوں کا نوٹیفکیشن واپس

اسلام آباد: وزارت مواصلات نے ٹرانسپورٹرز کی جانب سے ملک گیر ہڑتال کے بعد بھاری جرمانوں کا جاری کرہ نوٹیفکیشن واپس لے لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق یکم جنوری سے قومی شاہراہوں پر جرمانوں کی نئی شرح کا اطلاق کیا گیا تھا۔ آل پاکستان ٹرانسپورٹرز ایسوسی ایشن نے اس شرح کے نفاذ کے بعد پورے پاکستان میں پہیہ جام ہڑتال کر دی۔

مزید پڑھیں: قومی شاہراہوں پر نئے جرمانوں کا نفاذ ابھی نہیں ہوا: مراد سعید

2 جنوری کو وفاقی وزیر مواصلات مراد سعید نے قومی اسمبلی میں بیان دیتے ہوئے کہا تھا کہ جرمانوں کی شرح میں اضافے کا اطلا ق اب تک نہیں کیا گیا ہے۔ تاہم ٹرانسپورٹرز ایسوسی ایشن نے لاہور میں گورنر ہاوس کی طرف احتجاجی ریلی نکالی، جس دوران پولیس اور ہڑتالی مظاہرین میں ہونے والے مذاکرات ناکام ہو گئے۔ گزشتہ روز ہونے والیے مذاکرات کے بعد معاملہ سلجھا دیا گیا اور وزارت مواصلات نے موٹرویز اور قومی شاہراؤں پر بھاری جرمانوں کے لیے 11 دسمبر کو جاری کیا جانے والا نوٹیفکیشن واپس لے لیا ہے۔ وزارتِ مواصلات نے اس بارے میں موٹر ویز پولیس اور متعلقہ اداروں کو مطلع بھی کردیا ہے۔

مزید پڑھیں: قومی شاہراہوں پر نئے جرمانوں کا نفاذ، ٹرانسپورٹرز ہڑتال پر چلے گئے

یاد رہے حکومت نے نئے جرمانوں کی شرح 22 نومبر کو گزٹ آف پاکستان میں شائع کی تھی۔

آئی ڈی: 2020/01/04/2268 

متعلقہ خبریں

Leave a Comment