غیر قانونی تجاوزات کا الزام؛ راولپنڈی انتظامیہ کی ن لیگی رہنما چودھری تنویر کے گھر پر کارروائی

راولپنڈی: راولپنڈی انتظامیہ نے ایک نجی ہاوسنگ سوسائٹی میں ایک کاروائی میں مسلم لیگ ن کے رہنماء چوہدری تنویر کی رہائش گاہ اور پلازے کی بیرونی دیورایں توڑ دی ہیں۔ کاروائی کے دوران مبینہ طور پر چودھری تنویر کے حامیوں نے انتظامیہ پر پتھراؤ کیا۔ ڈپٹی کمشنر راولپنڈی نے اس کاروائی کے حوالے سے بتاتے ہوئے کہ کہ یہ کاروائی شاہراہ عام پر کیے گئے قبضے کو چھڑوانے کے لیے کی گئی۔

تفصیلات کے مطابق راولپنڈی ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی  انتظامیہ نے بحریہ ٹاؤن میں مسلم لیگ ن کے رہنماء چودھری تنویر کے گھر کی بیرونی دیواریں گرا دیں۔ مسلم لیگ کے کارکنوں نے مشتعل ہو کر انتظامیہ پر پتھراؤ کر دیا۔ ڈپٹی کمشنر کے مطابق چوہدری تنویر نے اپنے گھر اور پلازہ کی تعمیر کے دوران شاہراہ عام پر قبضہ کیا ہوا تھا، جس کو واگزار کروانے کے لئے کاروائی کی گئی۔
دوسری جانب چودھری تنویر کے بیٹے دانیال چودھری نے ایک ویڈیو بیان جاری کیا جس میں کہا کہ اس جگہ پر ہمارا گھر سو سال سے تعمیر شدہ ہے۔ آر ڈی اے انتظامیہ نے بغیر کسی نوٹس کے ان کے گھر پر ہلہ بولا اور بغیر کسی نوٹس کے گھر کی دیواریں گرائیں۔ چوہدری دانیال نے مزید الزام لگایا ہے کہ راولپنڈی انتظامیہ نے یہ سب کاروائی شیخ رشید کے کہنے پر کی۔ ڈپٹی کمشنر راولپنڈی نے سرکاری افراد پر پتھراؤ کرنے والے افراد کے خلاف قانونی کاروائی کرنے کا عندیہ بھی دیا ہے۔

دوسری طرف سینیٹ کے اجلاس کے دوران سینیٹر جاوید عباسی نے معاملے کی طرف توجہ دلاتے ہوئے کہا کہ چادر اور چاردیواری کا خیال رکھا جاتا ہے اور لوگوں کے گھر نہیں گرائے جاتے۔ چودھری تنویر کا اگر کوئی جرم ہے تو سامنے لایا جائے۔ چئیرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے چودھری تنویر کا گھر گرائے جانے کا معاملہ داخلہ کمیٹی کے سپرد کرتے ہوئے اس کی رپورٹ طلب کر لی۔

آئی ڈی: 2020/01/05/2464 

اپنا تبصرہ بھیجیں