دفترخارجہ نے پاکستان میں اقلیتوں سے متعلق بھارتی پروپیگنڈا مسترد کر دیا

ترجمان دفتر خارجہ عائشہ فاروقہ

اسلام آباد: دفترخارجہ نے پاکستان میں اقلیتی برادری سے متعلق بھارتی پروپیگنڈا مسترد کردیا۔

دفتر خارجہ ی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق پاکستان میں سکھ، ہندو اور عیسائیوں سمیت تمام اقلیتوں کو یکساں حقوق حاصل ہیں۔ بھارت پشاور اور ننکانہ صاحب کے واقعات کی مبینہ منفی تصویر کشی کر رہا ہے۔ بھارتی پروپیگنڈے کا مقصد مقبوضہ کشمیر میں ریاستی دہشت گردی سے توجہ ہٹانا ہے۔ جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ پاکستان گردوارہ ننکانہ صاحب پر کسی بھی حملے یا بے حرمتی کے الزامات کو مسترد کرتا ہے۔ پاکستان پر الزامات جھوٹ، آرایس ایس اور بی جے پی کی پروپگینڈا مہم کا حصہ ہیں۔

ترجمان دفتر خارجہ عائشہ فاروقی کا کہنا تھا کہ بھارت میں منصوبہ بندی کے تحت اقلیتوں سے امتیازی سلوک کیا جارہا ہے۔ دوسری طرف پاکستان میں سکھوں سمیت تمام مذاہب کی عبادت گاہوں کی تعظیم کی جاتی ہے۔ وزیراعظم کی جانب سےکرتارپور راہداری کا افتتاح پاکستان کے ویژن کا عکاس ہے۔

یاد رہے گزشتہ روز وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے بھی سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹوئیٹ کرتے ہوئے کہا تھا کہ ننکانہ صاحب میں ہونے والے واقعہ ان کے ویژن کا عکاس نہیں ہے۔ وزیر اعظم پاکستان عمران خان  نے مزید کہا کہ ننکانہ صاحب کے قابل مذمت واقعہ اور بھارت میں مسلمانوں اوردیگر اقلیتوں پرجاری حملوں میں فرق ہے۔ ننکانہ واقعہ پر حکومت،پولیس اور عدلیہ زیرو ٹالرنس دکھائیں گے ۔

 

آئی ڈی: 2020/01/05/2422 

متعلقہ خبریں

Leave a Comment