پارک لین کے ضمنی ریفرنس میں 22 جنوری کو ملزمان پر فرد جرم عائد ہونے کا امکان

Accountability and Anti Terrorism Court Islamabad

اسلام آباد: احتساب عدالت نے پارک لین  ضمنی ریفرنس میں ملزمان پر فرد جرم عائد کرنے کے لیے 22 جنوری کی تاریخ مقرر کر دی ہے۔ اس حوالے سے منی لانڈرنگ ضمنی ریفرنس میں تمام ملزمان کو نوٹس جاری کردیئے گئے۔ نیب تفتیشی افسر نے بتایا کہ 5 ملزمان کا نام ضمنی ریفرنس سے نکال دیا گیا۔ سابق صدر آصف علی زرداری نے حاضری سے استثنیٰ کی درخواست دے دی۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت اسلام آباد کے جج اعظم خان نے منی لانڈرنگ اور پارک لین ریفرنسز کی سماعت کی۔ سابق صدر کی ہمشیرہ فریال تالپور عدالت کے روبرو پیش ہوئیں۔

دوران سماعت آصف علی زرداری کے وکیل فاروق ایچ نائیک نے اپنے موکل کی آج کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست دائرکرتے ہوئے کہا کہ آصف علی زرداری کا کراچی میں علاج جاری ہے۔ انہیں متعدد امراض لاحق ہیں۔جج اعظم خان نے استفسار کیا کہ زین ملک کا معاملہ کہاں تک پہنچا؟ نیب کے تفتیشی افسرنے بتایا کہ زین ملک کا کیس مجاز اتھارٹی کے پاس زیر التوا ہے۔ آئندہ سماعت تک اس معاملہ کو کلیئر کر دیں گے ۔ جج نے ہدایت کی کہ آئندہ سماعت پر زین ملک سے متعلق پیشرفت رپورٹ سے آگاہ کریں۔

عدالت نے قراردیا کہ پارک لین ریفرنس میں آئندہ سماعت پر فرد جرم پر عائد کی جائے گی۔ تمام ملزمان حاضری یقینی بنائیں۔ عدالت نے منی لانڈرنگ ضمنی ریفرنس میں آصف علی زرداری، فریال تالپور،انور مجید، عبدالغنی مجید، حسین لوائی، زین ملک، نمرمجید، یونس قدوائی سمیت دیگر ملزمان کو نوٹس جاری کردیئے۔ نیب کے تفتیشی افسر نے بتایا کہ ضمنی ریفرنس میں 9 نئے ملزمان کو شامل کیا ہے۔ 5 ملزمان کا نام فہرست سے نکال دیا۔ عدالت نے پارک لین اور میگا منی لانڈرنگ ضمنی ریفرنسز کی سماعت 22 جنوری تک  ملتوی کر دی۔

 

آئی ڈی: 2020/01/07/2529 

متعلقہ خبریں

Leave a Comment