امریکہ نے ایران کے قریب بی-52 بمبار تعینات کر دئیے

خلیج فارس کے کشیدہ خطے میں کسی بھی قسم کی صورتحال کے پیش نظر امریکہ نے ایٹمی صلاحیت رکھنے والے کم از کم چھ بی 52 بمبار جہازوں کو ایک ہوائی اڈے پر تعینات کیا ہے

"واشنگٹن ایگزامینر” کے مطابق ، یہ چھ بمبار بحر ہند میں واقع ایک برطانوی ملکیت والے جزیرے کا مرکز ڈیاگو گارسیا میں مقیم ہوں گے۔ اس جگہ کو فوجی اہمیت حاصل ہے اور یہ ایرانی میزائلوں کی رینج سے باہر ہے۔

 فاکس نیوز کی ایک رپورٹ کے مطابق بی 52طیارے لویزیانا کے بارکسڈیل امریکی ایئر فورس کے اڈے سے اڑے تھے۔ دوسری طرف پینٹاگون نے ابھی تک جنگی طیاروں کی تعیناتی کے حوالے سے کوئی تصدیق نہیں کی۔

 دولت اسلامیہ کے خلاف امریکہ کی جنگ کے دوران بی 52 جنگی طیاروں کو دہشت گردوں کے مشتبہ ٹھکانوں پر  بم گرانے کے لئے استعمال کیا جا چکا ہے۔

امریکی خبر رساں ادارے سی این این نے بتایا  ہے کہ ان خدشات کے پیش نظر پیر کی شب خطے میں امریکی افواج ہائی الرٹ ہوگئی ہیں۔ سی این این کے مطابق حالیہ دنوں میں ایران کو ڈرون اور میزائیلوں سمیت فوجی سازوسامان منتقل کرتے دیکھا گیا ہے۔

پیر کے روز، امریکی میری ٹائم انتظامیہ نے اس خطے میں تجارتی امریکی بحری جہازوں کو متنبہ کیا ہے کہ خطے میں امریکی بحری مفادات کے خلاف ایرانی کارروائی کا امکان موجود ہے۔

یاد رہے منگل کے روز ایران نے عراق میں امریکی فوجی اڈوں پر میزائلز سے حملہ کیا ہے۔ ایرانی میڈیا کے مطابق اس حملے میں کم از کم 80 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

 

آئی ڈی: 2020/01/08/2669 

متعلقہ خبریں

Leave a Comment