پی ایم ڈی سی تحلیلی کے صدارتی آرڈیننس کے خلاف درخواست پر فیصلہ محفوظ

Islamabad High Court

اسلام آباد: اسلام آباد ہائی کورٹ نے پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل کو تحلیل کرنے کے صدارتی آرڈیننس کیخلاف دائر درخواست پر فریقین کے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ محفوظ کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس محسن اختر کیانی نے پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل کو تحلیل کرنے کے صدارتی آرڈیننس کیخلاف دائر درخواست پر  سماعت کی۔ وفاق کی جانب سے ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے دلائل دیئے کہ معاملہ پارلیمنٹ میں ہے، عدالت کوئی حکم جاری کرنے میں احتیاط سے کام لے۔ جس پر درخواست گزاروں کے وکیل نے موقف اپنایا کہ جہاں بنیادی حقوق کی بات ہو، وہاں عدالتوں کو احتیاط سے نہیں، بلکہ فیصلہ کرنا چاہیے۔ اس پر جسٹس محسن اختر کیانی نے استفسار کرتے ہوئے کہا کہ کیا عدالت پارلیمان کو کوئی ہدایت جاری کرسکتی ہے؟ انہوں نے مزید ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ بل پارلیمنٹ کے سامنے ہے، یہ معاملہ ایمرجنسی نہیں بلکہ نارمل صورت حال ہے۔ وکیل درخواست گزار نے موقف اپنایا کہ آرڈیننس کی پالیسی کو چیلنج نہیں کیا، بلکہ ملازمین کے حقوق کے لیے یہاں آئے ہیں۔ عدالت کا فیصلہ اس لیے اہم ہو گا کیونکہ یہ پارلیمنٹ کے لیے رہنمائی ثابت ہو گا۔ دلائل مکمل ہونے پر عدالت نے فیصلہ محفوظ کر لیا۔

واضح رہے پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل (پی ایم ڈی سی) کے سابقہ ملازمین نے صدارتی آرڈیننس کو چیلنج کر رکھا ہے۔

 

آئی ڈی: 2020/01/08/2671 

متعلقہ خبریں

Leave a Comment