کوئٹہ مدرسے میں دھماکہ، ڈی ایس پی سمیت 13 افراد جاں بحق


کوئٹہ: بلوچستان میں کوئٹہ کے علاقے سیٹلائٹ ٹاؤن کی مسجد و مدرسہ میں دھماکے سے ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ پولیس (ڈی ایس پی) سمیت 13 افراد جاں بحق اور 19 زخمی ہوگئے۔

دھماکا سیٹلائٹ ٹاؤن کے نواحی علاقے غوث آباد کی ایک مسجد و مدرسہ میں ہوا جس کی نوعیت معلوم کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔

ڈپٹی انسپکٹر جنرل (ڈی آئی جی) کوئٹہ عبدالرزاق چیمہ نے دھماکے میں ڈی ایس پی امان اللہ سمیت 13 افراد کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کی۔ان کا کہنا تھا کہ دھماکے میں 19 افراد زخمی بھی ہوئے۔ دھماکے کے بعد پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کی نفری جائے وقوع پر پہنچی جبکہ ریسکیو عملے نے زخمیوں کو سول ہسپتال کے ٹراما سینٹر منتقل کیا جہاں انہیں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔

وزیر اعظم عمران خان کی مذمت

وزیر اعظم عمران خان نے کوئٹہ میں  دھماکے کی شدید مذمت کی ہے۔ وزیر اعظم نے قیمتی جانوں کے ضیاع پر گہر ے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا جبکہ انہوں نے زخمیوں کو بہترین طبی امداد کی فراہمی کی ہدایت کرتے ہوئے واقعے کی رپورٹ طلب کر لی ہے۔

عسکری قیادت کی مذمت

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ معصوم لوگوں کو نشانہ بنانے والے ہرگز مسلمان نہیں ہو سکتے۔ اس کے علاوہ ترجمان پاک بحریہ کے مطابق چیف آف دی نیول اسٹاف ایڈمرل ظفر محمود عباسی نے بھی کوئٹہ دھماکے کی شدید مذمت کی ہے۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ نیول چیف نے دھماکے میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کیا۔ نیول چیف نے شہداء کے درجات کی بلندی اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کیلئے دعا کی۔

وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال کی سیٹلائٹ ٹاؤن کی مسجد میں دھماکے کی مذمت کی ہے۔ انہوں نے دھماکے میں جاں بحق افراد کے لواحقین سے تعزیت کا اظہار کیا اور متعلقہ حکام کو زخمیوں کو بہتر طبی امداد کی فراہمی کی ہدایت کی۔

واضح رہے کہ 3 روز قبل کوئٹہ کے میکانگی روڈ پر بھی دھماکا ہوا تھا جس کے نتیجے میں 2 افراد جاں بحق اور دیگر 14 زخمی ہوئے تھے۔ پولیس کے مطابق دھماکا کوئٹہ کے لیاقت بازار کے قریب میکانگی روڈ پر سیکیورٹی فورسز کی گاڑی کے قریب ہوا۔

قبل ازیں 15 نومبر 2019 کو کوئٹہ کے علاقے کچلاک میں ریموٹ کنٹرول بم دھماکے کے نتیجے میں 2 سیکیورٹی اہلکار شہید اور 5 زخمی ہوگئے تھے۔

یہ ابتدائی خبر ہے جس میں حکام سے تصدیق کے بعد مزید تفصیلات شامل کی جا رہی ہیں

آئی ڈی: 2020/01/10/2911


اپنا تبصرہ بھیجیں