افغانستان میں امریکی فوجی قافلے پر طالبان کا حملہ


قندھار : افغانستان میں امریکہ کے فوجی قافلے پر بم حملہ کیا گیا ہے تاہم دھماکے کے بعد نقصان کی تفصیلات ابھی موصول نہیں ہوئی ہے

 افغانستان کے جنوبی صوبے قندھار میں ہفتے کو ایک آئی ای ڈی (خود ساختہ بم) کے دھماکے سے امریکہ فوجی قافلہ نشانہ بنا گیا ہے۔

اس دھماکے کی ذمہ داری طالبان نے قبول کر لی ہے۔

قندھار میں موجود افغان حکام نے صحافیوں کو بتایا کہ یہ دھماکہ ضلع ڈھنڈ میں ہوا ہے۔ دھماکے کی زد میں امریکی فوج کی ایک گاڑی آئی ہے،

ان کا مزید کہنا تھا کہ غیر ملکی افواج نے اس علاقے کو گھیرے میں لے لیا تھا اس وجہ سے جانی نقصان کے حوالے سے معلومات موجود نہیں ہیں۔

نیٹو کے ایک ترجمان نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ صورت حال کا جائزہ لیا جا رہا ہے۔

دوسری جانب طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے دعویٰ کیا ہے کہ دھماکے میں غیر ملکی فوج کا گاڑی مکمل طور پر تباہ ہوئی۔

ذبیح اللہ مجاہد نے کے دعوے کے مطابق دھماکے سے گاڑی میں موجود تمام افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

عمومی طور پر افغانستان میں شدید برفباری اور سردی کی وجہ سے طالبان کے حملوں میں کمی آ جاتی لیکن حالیہ موسم سرما میں اتحادی افواج اور افغان فورسز پر طالبان کے پے در پے حملوں کے بعد یہ بات بھی غلط ثابت ہوئی ہے۔

افغانستان میں 2001 کے بعد سے اب تک امریکہ کے 2400 سے زائد فوجیوں کی ہلاکت ہو چکی ہے


Leave A Reply

Your email address will not be published.