ٹڈی دل کے تدارک کے لیے اڑنے والا جہاز گر کر تباہ

صادق آباد: صادق آباد میں ٹڈی دل کے سپرے کیلئے آنیوالا جہاز باندھی کے قریب گر کر تباہ ہو گیا ہے۔صادق آباد کی  ضلعی انتظامیہ نے یہ طیارہ حکومت پنجاب سے ٹڈی دل پر اسپرے کرنے کے لیے طلب کیا تھا۔ 

ابتدائی اطلاعات کے مطابق جہاز میں موجود پائلٹ اور انجینئر جاں بحق ہو گئے ہیں۔پائلٹ کی شناخت محمد شعیب، جبکہ انجینئر کی شناخت فواد بٹ کے نام سے ہوئی۔

حادثے کی اطلاع ملتے ہی ریسیکو ٹیمیں جائے وقوعہ کی جانب روانہ کردی گئی ہیں۔

مزید پڑھیں: فصلوں پر اسپرے کرنے والے 20 جہاز ناکارہ ہونے کا انکشاف

وفاقی وزیر نیشنل فوڈ سیکورٹی خسرو بختیار نے حادثے سے متعلق اپنے بیان میں کہا ہے کہ وزارت غذائی تحفظ و تحقییق کے ادارے ڈی پی پی کی مختلف ٹیمیں پچھلے چھ ماہ سے ٹڈی دل کے خلاف سرگرم ہیں۔ آج صادق آباد، رحیم یار خان کے قریب ڈی پی پی کے جہاز کا حادثہ نہایت افسوسناک ہے۔ ان نے کہ وہ شہداء کے لواحقین کے غم میں برابر کے شریک ہیں اور دعا گو ہیں کہ خدا شہید ہونے والے جوانوں کے درجات بلند کرے ۔ شہید ہونے والے جوان نہایت قابل اور پیشہ ورانہ صلاحیتوں کےحامل اہلکار تھے۔

واضح رہے پاکستان میں پچھلے کئی سالوں سے ٹڈی دل نے ایک مستقل مسئلے کی شکل اختیار کر لی ہے، جو ہر سال بڑھتا چلا جا رہا ہے۔ واضح رہے ٹڈی دل نے پنجاب کے چولستان اور سندھ میں کئی ایکڑوں پر کھڑی فصلوں اور پھلوں کے باغات کو شدید نقصان پہنچایا ہے۔ پچھلے سال ٹڈی دل نے سندھ پر حملے میں ٹڈی دل نے کھڑی فصلوں، کھیتوں میں لگی سبزیں، کپاس، حتی کہ جانوروں کے چارے کو شدید نقصان پہنچایا تھا۔ خیر پور سب سے متاثرہ علاقوں میں شمار ہوتا ہے جہاں کسانوں کو کروڑوں روپے کا نقصان برداشت کرنا پڑا۔

 

یہ ابتدائی خبر ہے۔ اس میں مزید تفصیلات شامل کی جا رہی ہیں۔

 

آئی ڈی: 2020/01/12/3023

متعلقہ خبریں

Leave a Comment