ایم کیو ایم نے تحریک انصاف سے سندھ کی گورنر شپ مانگ لی

ایم کیو ایم نے پی ٹی آئی کی حکومت سے سندھ کی گورنر شپ مانگ لی ہے۔

ذرائع کے مطابق ایم کیو ایم نے تحریک انصاف کی حکومت سے سندھ کی گورنر شپ مانگ لی ہے۔ ذرائع کے مطابق ایم کیو ایم نے اس حوالے سے وفاقی حکومت کو آگاہ کر دیا ہے۔ اس وقت سندھ میں تحریک انصاف کے عمران اسماعیل گورنر ہیں۔ یہ بھی بتایا جا رہا ہے کہ ایم کیو ایم ان سے خوش نہیں ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ آگلے چند گھنٹوں میں واضح ہو جائے گا کہ پی ٹی آئی کی حکومت عمران اسماعیل کو گورنر کے عہدہ سے فارغ کرتی ہے یا ایم کیو ایم کو کابینہ میں ایک اور سیٹ دینے پر راضی ہوتی ہے۔

واضح رہے ماضی میں ایم کیو ایم نے پی ٹی آئی کی حکومت کو آئی ٹی کی وزارت واپس کے کر صحت اور میری ٹائم آفیر کی وزارت مانگی تھی، لیکن تحریک انصاف کی حکومت نے یہ مطالبہ ماننےسے انکار کر دیا تھا۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ حکومت اس مسئلہ کو ایک سے دو دن میں حل کر لے گی۔

واضح رہے گورنر سندھ عمران اسماعیل نے پیر کو کراچی بحالی کمیٹی کا اجلاس طلب کر رکھا ہے۔ ایم کیو ایم کے ممبران نے اس اجلاس میں آنے سے معذرت کر لی ہے۔

یاد رہے تحریک انصاف اور ایم کیو ایم کے مابین حکومت میں آنے سے قبل 9 نکاتی معاہدہ طے پایا تھا، جس کے تحت مردم شماری کے حوالے سے قومی اسمبلی سے پاس کردہ قرارداد، انتخابی حلقوں کو کھولنے، جابز میرٹ کی بنیاد پر دینے سمیت متعدد نکات پر عمل درآمد ہونے طے پایا تھا، لیکن اب تک پی ٹی آئی حکومت کی جانب سے کسی پر بھی عمل نہیں کیا گیا۔ ایم کیوایم کے رہنما عامر خان نے بھی کہا ہے کہ وہ کسی صورت وفاقی کابینہ میں شامل نہیں ہوں گے۔

یاد رہے گزشتہ روز ایم کیو ایم کے کنوینئر خالد مقبول صدیقی نے ایک پریس کانفرنس میں اعلان کیا تھا کہ ایم کیو ایم پاکستان وفاقی کابینہ سے علیحدہ ہونے کا سوچ رہی ہے۔ تحریک انصاف کی حکومت نے جہانگیر ترین کو ایم کیو ایم سے رابطے کا ٹاسک دے دیا ہے۔

 

آئی ڈی: 2020/01/13/3095 

متعلقہ خبریں

Leave a Comment