نیب ترمیمی ایکٹ، کرپٹ افراد کے لیے بُری خبر آ گئی

National Accountability Bureau

اسلام آباد: نیب کے شکنجے میں قید سیاست دانوں اور دیگر افراد کے لیے بری خبر آ گئی ہے۔ وفاقی حکومت کی جانب سے نافذ کردہ نیب ترمیمی آرڈینینس کا اطلاق جاری کیسز پر نہیں ہو گا۔

ذرائع کے مطابق نیب نے اپنے تمام ریجنل آفسز کو ہدایت کی ہے کہ وفاقی حکومت کی جانب سے نافذ کردہ نیب ترمیمی آرڈیننس کا اطلاق پہلے سے جاری کیسز پر نہیں ہو گا۔ اس کا اطلاق ترمیمی آرڈیننس کی منظوری کے بعد کی تاریخ پر ہو گا۔ اس حوالے ہدایت کی گئی ہے کہ کیسز پر توجہ بدستور مرکوز رکھی جائے۔

واضح رہے کہ میڈیا میں اس حوالے سے بہت بخث جاری ہے کہ اس کا اطلاق ماضی کے کیسز پر بھی ہو گا۔ اس بحث کے بعد نیب نے اپنے دفاترکو واضح ہدایات جاری کر دہی ہیں۔

دوسری جانب حکومت نے اپوزیشن کے مطالبے پر منظور کردہ آرڈیننس کو واپس کے لیا ہے اوراس کو کمیٹی میں بحث کے بعد منظوری کروایا جائے گا۔اس وقت اپوزیشن جماعتوں کے رہنماوں سمیت دیگر افراد پر کریشن کے کیسز اور انکوائریاں زیر تفتیش ہیں۔ حکومت نے حال ہی میں نیب ترمیمی آرڈیننس جاری کیا تھا، جس میں کہا گیا ہے کہ اب نیب کو کسی بھی کیس میں جرم ثابت کرنا ہو گا، نہ کہ جس پر الزام ہے۔

واضح رہے بیوکریٹس نے اس آرڈینینس کو جاری کروانے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔

 

آئی ڈی: 2020/01/13/3124 

متعلقہ خبریں

Leave a Comment