بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام سے مستفید ہونے والے سرکاری افسران کی مزید تفصیلات جاری


اسلام آباد: چیئر پرسن بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام ثانیہ نشتر نے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام سے مستفید ہونے والے سرکاری افسران کی تفصیلات کے حوالے سے کہا ہے کہ ایک لاکھ 40 ہزار سرکاری ملازمین اس پروگرام سے وظیفہ وصول کر رہے تھے۔ ان میں ریلویز, پاکستان پوسٹ اور بی آئی ایس پی کے ملازمین شامل تھے۔ ڈاکٹر ثانیہ نشتر کا کہنا تھا کہ بی آئی ایس پی کے ملازمین کو اسی روز شوکاز نوٹس جاری کردیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق چیئر پرسن بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام ڈاکٹر ثانیہ نشتر مزید حقائق سامنے لے آئی ہیں۔ ثانیہ نشتر کا کہنا ہے کہ نادرا کے ڈیٹا سے ایسے ایک لاکھ 40 ہزار سرکااری ملازمین کا سراغ لگایا گیا ہے جو بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام سے پیسے وصول کر رہے تھے۔ ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کہا کہ صوبائی چیف سیکریٹریز کو سرکاری ملازمین کے خلاف کارروائی کی ہدایت کی گئی ہے۔ وفاقی اور صوبائی محکموں کے ملازمین بھی بی آئی ایس پی میں شامل تھے۔ بی آئی ایس پی کے ملازمین کو اسی روز شوکاز نوٹس جاری کر دیا گیا تھا۔ صوبائی چیف سیکریٹریز کو سرکاری ملازمین کے خلاف کارروائی کی ہدایت کی گئی ہے۔

ثانیہ نشتر نے کہا کہ ان سرکاری ملازمین کی لسٹیں مرتب کی جارہی ہیں۔ وزیر اعظم کے حکم کے مطابق ان سرکاری ملازمین کا کا نام بہت جلد پبلک کردیا جائے گا۔ بی آئی ایس پی سے نکالے گئے مستحقین کے ڈیٹا کا تجزیہ کیا گیا تھا۔ ثانیہ نشتر کا کہنا تھا کہ مستحقین کا ڈیٹا نادرا سے منسلک کیا گیا۔ مستحقین کی گاڑیوں, جائیداد اور بیرون ملک دوروں کی تفصیلات اکٹھی کی گئیں۔ ہمیں پتہ چلا کہ کچھ لوگ مستحقین نہیں رہے۔ ان افراد کو چیک کرنے کے بعد پروگرام سے نکالا گیا جبکہ نئے افراد کو بھی چیک کرنے کے بعد شامل کیا جائے گا۔

 

آئی ڈی: 2020/01/15/3590

Leave A Reply

Your email address will not be published.