پاک چین تعلقات و تعاون صرف سی پیک تک محدود نہیں رہے گا: چینی سفیر

اسلام آباد: پاکستان میں تعینات چینی سفیر ژاو جنگ کہتے ہیں کہ 2020  میں پاک چین تعلقات و تعاون صرف سی پیک تک محدود  نہیں رہے گا۔ یہ تعاون سی پیک سے بڑھ کر دفاع اور دیگر شعبوں میں بھی آگے بڑھے گا۔ چینی سفیر نے مقبوضہ کشمیر کی موجودہ صورتحال ،بھارت کے غیر قانون اقدامات اور امریکہ کی جانب سے ایران پر پابندیوں پر تحفظات کا اظہار کیا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں چینی سفارتخانے کے زیر اہتمام منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چینی سفیر ژاو جنگ کا کہنا تھا 2020 ایک نئے دور کا آغاز ہے۔ نئے برس کا آغاز ہم میڈیا اور تھنک ٹینک کے دوستوں کے ساتھ مل کر کر رہے ہیں۔ ہم نے چین میں ایک ترقی یافتہ فلاحی ریاست کی تشکیل مکمل کی۔ چین کے خلاف پراپیگنڈے پر مغربی میڈیا کی جانب سے بہت کردار ادا کیا گیا۔  سی پیک پر بھی مغربی میڈیا نے بہت پروپیگنڈہ کیا۔

چینی سفیر کا مزید کہنا تھا ہمیں افغانستان، مشرق وسطی میں بھی بہت سے چیلنجز کا سامنا ہے۔ پاکستان اور چین مل کر امن و استحکام کے لیے کوششیں کر رہے ہیں۔ سی پیک کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا 2020  میں پاک چین تعلقات و تعاون صرف سی پیک تک محدود نہیں رہے گا۔ یہ تعاون سی پیک سے بڑھ کر دفاع اور دیگر شعبوں میں بھی آگے بڑھے گا۔ چینی سفیر ژاو جنگ نے مقبوضہ کشمیر اور ایران امریکہ کشیدگی پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں اقدامات ناقابل قبول ہیں۔ مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل ہونا چاہیے، جبکہ ہم  امریکہ کی جانب سے کسی قسم کی ایران پر پابندیوں کے خلاف ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم ایران اور امریکہ کے باہمی مسائل کا حل سفارتی طریقہ سے تلاش کرنے کے حامی ہیں۔ پاکستانی خواتین کی چینی باشندوں سے شادیوں کے حوالے سے ان کا کہنا تھاکہ  چینی میرج ایجنسیوں کو بین الاقوامی شادیاں کرانے کی اجازت نہیں ہے۔ ایسی غیر قانونی ایجنسیوں کے ہاتھوں ہونے والی شادیاں ہمارے قوانین کے مطابق بھی غیر قانونی ہیں۔ ایسی 150 کے قریب شادیاں طے پائیں۔ ہمیں ایسی شادیوں کے حوالے سے انتہائی محتاط رہنے کی ضرورت ہے۔

 

آئی ڈی: 2020/01/15/3597

متعلقہ خبریں

Leave a Comment