چائلڈ پورنو گرافی کا ایک اور کیس سامنے آ گیا

راولپنڈی: سائبر کرائم راولپنڈی نے چائلڈ پورنو گرافی میں ملوث گینگ کا کارندہ گرفتار کرلیا۔ سائبر کرائم سیل نے چائلڈ پورنو گرافی میں ملوث دو ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کر لیا۔ مقدمہ راولپنڈی کے رہائشی قیصر شہزاد اور عمر ضیارف کے خلاف درج کیا گیا۔ ایف آئی آر کے مطابق ملزمان بچوں کی پورنو گرافی پر مشتمل وڈیو بناتے تھے۔  ملزمان بچوں کو وڈیو کے ذریعے بلیک میل اور جنسی ہراساں کرتے تھے۔ ملزم قیصر شہزاد کو راولپنڈی کے علاقے قائد اعظم کالونی دھمیال کیمپ سے چھاپہ مار کر گرفتار کیا گیا۔ گرفتار ملزم سے موبائل فون وڈیوز، یو ایس بی اور میموری کارڈ برآمد کر لیے گئے۔ ملزم قیصر شہزاد ویڈیوز بنا کر ملزم عمر ضیاء کو دبئی بھیجتا تھا۔  ملزم مفت پتنگوں کا لالچ دیکر معصوم بچوں کو زیادتی کا نشانہ بناتا تھا۔

تفصیلات کے مطابق ایف آئی اے کے سائبر کرائم ونگ کو اطلاع ملی کہ راولپنڈی کے علاقے دھمیال میں ایک گروہ بچوں کی نازیبا تصاویر اور ویڈیوز بنا کر ان کو بلیک میل کر کے ان کے ساتھ زیادتی کرتا ہے۔

ملزم قیصر شہزاد کے موبائل سے بچوں کی متعدد نازیبا تصاویر اور ویڈیوز برآمد کر کے مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔ ایف آئی اے کے مطابق اس گینگ میں ملوث دیگر ملزمان کی گرفتاری کے لیے گھیرا تنگ کر دیا گیا ہے اور ان کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

آئی ڈی: 2020/01/16/3698 

اپنا تبصرہ بھیجیں