صوبائی حکومت نے سرکاری ملازمین کیلئے ریٹائرمنٹ کی حدعمر 60 سال سے بڑھا کر63 سال کر دی۔

پشاور: صوبہ خیبرپختونخوا حکومت نے سرکاری ملازمین کو بڑی خوشخبری سنا دی۔ صوبائی حکومت نے سرکاری ملازمین کیلئے ریٹائرمنٹ کی حدعمر 60 سال سے بڑھا کر63 سال کر دی۔ خیبرپختونخوا میں ہر سال ریٹائرڈملازمین کو پینشن کی مدمیں 70ارب روپے ادا کیے جاتے ہیں تاہم مدت ملازمت میں اضافے سے حکومت نے تین سالوں میں 54 ارب کی بچت کا منصوبہ بنا لیاہے۔سرکاری اعداد وشمار کے مطابق خیبرپختونخوا میں ہر سال 5 ہزارکے قریب ملازمین ریٹائرڈہوکر پینشن وصول کرتے ہیں،جس کیلئے گزشتہ سال 50 ارب جبکہ رواں سال اخراجات 70 ارب پر پہنچ گئے ہیں جبکہ ترقیاتی بجٹ 30 فیصدسے کم ہوکر 15 فیصد کی خطرناک شرح پر پہنچ گیا۔اس ضمن میں گفتگو کرتے ہوئے صوبائی وزیر خزانہ تیمور سلیم جھگڑانے کہاہے کہ اس نئی قانون سازی سے ہر سال نئی ملازمتیں پیدا کی جائیں گی جبکہ موجودہ ملازمین کی ترقی کو نہیں روکا جائے گا۔انہوں نے بتایاحکومت رواں سال 30 ہزار سے زائد نئی بھرتیاں کرنے جا رہی ہے جس میں سے 17 ہزار نوکریاں قبائلی اضلاع میں رکھی جائیں گی۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment