وادی نیلم میں جاں بحق افراد کی تعداد 79 ہو گئی

مظفرآباد : آزاد کشمیر کے سیاحتی مقام وادی نیلم میں برفانی تودے سے ہلاکتوں کی تعداد 79 ہوگئی۔ فوج سمیت دیگر اداروں کی جانب سے رابطہ سڑکوں کو کھولنے کیلئے کام جاری ہے۔

تفصِل کے مطابق ملک بھر میں حالیہ بارشوں اور برفباری سے جان بحق افراد کی تعداد 106 تک پہنچ گئی جس میں صرف آزاد کشمیر کے سیاحتی مقام وادی نیلم میں برفانی تودہ سے ہلاکتوں کی تعداد 79 ہوگئی۔ وادی نیلم میں برفانی تودہ کی زد میں آئی 13 سالہ ثمینہ اسپتال میں چل بسی۔ اس کے علاوہ ذیلی وادیاں سرگن اور گریس میں برفانی تودوں سے متاثرہ گاؤں میں ایس ڈی ایم اے اور پاکستانی افواج کا ائیر ریلیف آپریشن جاری ہے۔ اس دوران مزید ایک سو خاندانوں کیلئے گرم کپڑے ،بستر، اشیاء اور خوارک فراہم کیے گئے ہیں۔

دوسری جانب مرکزی شاہراہ نیلم سمیت بند راستوں کو کھولنے کیلئے کام بھی جاری ہے ،جبکہ ابھی تک17 روز سے بند لیپہ روڈ کو اب تک نہ کھولا جاسکا۔ سیکرٹری تعمیرات عامہ آزاد کشمیر غلام بشیر مغل نے بتایا کہ اگر موسمی حالات خراب نہ ہوئے تو دو روز کے اندر شاردہ تک مرکزی شاہراہ بحال کر دی جائے گی، جبکہ متاثرہ گاوں تک زمینی راستہ بحال کرنے میں 5 دن لگیں گے۔

مزید براں گلگت بلتستان کے بالائی علاقوں شنکر گڑھ، دریلے میرملک،اور اسکمل کی رابطہ سڑک تاحال بحال نہ ہو سکیں۔ شدید برف باری کے باعث بالائی علاقوں میں رہنے والے 27 ہزار میکن تاحال محصورہیں۔ 

 

آئی ڈی: 2020/01/18/3722

متعلقہ خبریں

Leave a Comment