پنجاب کے قانون الگ سندھ کے لیے الگ ہے، کیا سندھ کالونی ہے: بلاول بھٹو زرداری

کراچی: چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی حکومت عوام دشمن ہے۔ پی ٹی آئی غریب دشمن معاشی پالیسی پرچل رہی ہے۔ ن لیگ اور پی ٹی آئی کی معاشی پالیسیوں میں فرق نہیں۔ عوام دشمن حکومت سے عوام کو حق دلوانا پڑےگا۔ ماننا پڑے گا کہ طاقت کا سرچشمہ عوام ہے، ورنہ گھر جانا ہو گا۔ وفاق اٹھارویں ترمیم کے تحت سندھ کو حقوق دے۔ وفاق نے منصوبوں کےلئے سندھ کو ابھی تک فنڈز نہیں دیئے۔ وفاق سے اپنے مطالبے کی جدوجہد کرتے رہیں گے۔ وفاق کو سندھ کا حق چھیننے نہیں دیں گے۔

چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نےدھابیجی میں  پمپ ہاوس کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت عوام دشمن ہے۔ پی ٹی آئی غریب دشمن معاشی پالیسی پرچل رہی ہے۔ ن لیگ اور پی ٹی آئی کی معاشی پالیسیوں میں فرق نہیں۔ انہوں نے کہا کہ عوام اب معاشی قتل برداشت نہیں کرسکتے۔ حکومت ہر طر ف سے عوام کےلئے عذاب بن چکی ہے۔ گیس، بجلی، پٹرول سمیت ہر چیز مہنگی کر دی گئی ہے۔ ناکام پالیسیوں کی وجہ سے ملک کو نقصان پہنچ رہا ہے۔

بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ عوام دشمن حکومت کو عوام کو حق دلوانا پڑے گا۔ ماننا پڑے گا کہ طاقت کا سرچشمہ عوام ہے ورنہ گھر جانا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ تجاوزات کے نام پر غریب عوام کے سر سے چھتیں چھین لی گئیں۔ پی ٹی آئی حکومت ہر طرح سے غریب عوام کا خون چوس رہی ہے۔ چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ پنجاب کا آئی جی تبدیل ہو جاتا ہے لیکن وزیر اعلیٰ کو پتہ ہی نہیں ہوتا۔ کیا آج تک سندھ ایک کالونی ہے؟

انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت کے وزرا کم وسائل میں زیادہ کام کر رہے ہیں۔ ایک سال سے سندھ میں جرائم بڑھ رہے ہیں۔ پنجاب کا آئی جی تبدیل ہوجاتا ہے لیکن کسی کو پتہ ہی نہیں ہوتا۔ اپنی ناکامی اور نا اہلی چھپانے کے لئے سب کچھ کیا جا رہا ہے۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ امن و امان کی صورتحال پر عوام ہم سے ناراض ہیں۔ نالائق حکومت ہمیں تقسیم کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ ایک پاکستان میں قانون بھی ایک ہی ہونا چاہیے۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ پانی کا مسئلہ حل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ سندھ حکومت نے تاریخی منصوبے کا افتتاح کیا ہے۔ پانی کا مسئلہ حل کرنا سندھ حکومت کی ترجیح ہے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ میں پانی کا مسئلہ ایک دن میں حل نہیں ہوسکتا۔ سندھ حکومت نے ہزاروں کلومیٹر کی پانی کی پائپ لائنز بچھائیں، لیاری میں بھی پانی کی فراہمی کا منصوبہ چل رہا ہے۔

چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ وفاق اٹھارویں ترمیم کے تحت سندھ کو حقوق دے۔ وفاق نے منصوبوں کےلئے سندھ کو ابھی تک فنڈز نہیں دیئے۔ وفاق نے سندھ میں ایک پتھر تک نہیں لگایا۔ انہوں نے کہا کہ سندھ میں واٹر پائپ لائن کے منصوبے چل رہے ہیں۔ ایک وفاقی وزیر نے اسمبلی میں کہا تھا سندھ کا پانی چوری ہو رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وفاق سے اپنے مطالبے کی جدوجہد کرتے رہیں گے۔ وفاق کو سندھ کا حق چھیننے نہیں دیں گے۔ انہوں نے وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وفاق سندھ سے کیے گئے وعدے پورے کرے۔

 

آئی ڈی: 2020/01/21/3852

متعلقہ خبریں

Leave a Comment