لوگوں نے تبدیلی کو ووٹ دیا، اب بھگتیں: شاہد خاقان عباسی

اسلام آباد: احتساب عدالت نے ایل این جی ریفرنس میں سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے جوڈیشل ریمانڈ میں 4 فروری تک توسیع کر دی۔ عدالت نے نیب سے مفرور ملزم شاہد اسلام کے وارنٹ گرفتاری سے متعلق رپورٹ طلب کر لی۔ میڈیا سے گفتگو میں شاہد خاقان عباسی نے پارٹی قیادت سے ناراضگی کی تردید کرتے ہوئے حکومت پر کڑی تنقید کی۔

تفصیل کے مطابق ایل این جی ریفرنس کی سماعت احتساب عدالت کے جج اعظم خان نے کی۔ سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سمیت تمام ملزمان پیش ہوئے۔ سابق وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل حاضری سے استثنیٰ کے باعث پیش نہیں ہوئے۔ عدالت نے چیئر پرسن اوگرا عظمی عادل اور سابق چیئرمین سعید احمد خان سمیت دیگر ملزمان کو حاضری یقینی بنانے کے لیے ایک کروڑ روپے کے مچلکے جمع کرانے کا حکم دیتے ہوئے سماعت 4 فروری تک ملتوی کر دی۔ عدالت نے نیب سے مفرورملزم شاہد اسلام کے وارنٹ گرفتاری کی رپورٹ بھی طلب کر لی۔

لوگوں نے تبدیلی کو ووٹ دیا، اب بھگتیں: شاہد خاقان عباسی

پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگومیں شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ ان کی کسی سے کوئی ناراضگی نہیں۔ آٹے کے بحران پر بات کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ نیا پاکستان ہے، لوگ روٹی کھانا چھوڑ دیں تو مسئلہ ہی ختم ہو جائے۔ یہ اپنی ناکامی پر شرمندہ بھی نہیں، آٹا نہیں دے سکتے تو شرمندہ تو ہو جائیں۔

سابق وزیراعظم کا  یہ بھی کہنا تھا کہ بدقستمی سے اسمبلی چل ہی نہیں رہی۔ ایوان میں کوئی بات کریں۔ اسپیکر صاحب اجلاس ختم کردیتے ہیں۔ صرف ایک بل بڑی عجلت میں منظور ہوا۔ الیکشن کمیشن کے ارکان کی تعیناتی پر بیٹھ کر بات کرنا اچھا ہے۔

 

آئی ڈی: 2020/01/21/3866

متعلقہ خبریں

Leave a Comment