او جی ڈی سی ایل کے شئیرز میں غیر معمولی اتار چڑھاو، مارکیٹ میں افواہیں گرم

اسلام آباد: بدھ کو اسٹاک مارکیٹ میں اوجی سی ڈی ایل کے شیئرز میں غیر معمولی اتار چڑھاو دیکھا گیا۔  پورے دن میں او جی ڈی سی ایل کے انیس لاکھ دو ہزار شیئرز کی ٹریڈنگ ہوئی اور ایک موقعہ پر شیئرز140 روپے کی سطح پر ٹریڈ ہوتا رہا۔

اس حوالے سے اسٹاک مارکیٹ کو ریگولیٹ کرنے والے ادارے ایس ای سی پی نے خاموشی اپنائے رکھی ،جبکہ پرائیوٹائزیشن کمیشن نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ مارکیٹ میں جاری افواہوں میں کوئی صداقت نہیں ہے کہ سرکاری کمپنی کے سات فیصد شیئرز کو سستے داموں میں فروخت کیا جارہا ہے۔ ادارےکے سات فیصد شیئرز او جی ڈی سی ایل کی فنانشل پوزیشن کے مطابق ہی فروخت کیے جائیں گے۔ پی سی نے کہا کہ او جی ڈی سی ایل کے شیئرز کی فروخت کے لیے فنانشل ایڈوائز کا انتخاب کیا جا رہا ہے ۔انتخاب کے بعد فنانشل ایڈوائز حکومت کو ادارےکے سات فیصد شیئرز کی فروخت کے حوالے سے جامع رپورٹ دے گا۔

دوسری جانب اسٹاک مارکیٹ میں کاروبار کرنے والے لوگوں کے مطابق او جی ڈی سی ایل کے شیئرز کی فروخت کی خبریں پھیلانے میں مین بڑے اسٹاک بروکرز کا ہاتھ تھا کیونکہ وہ اس سے پیسہ بنانا چاہتے تھے ۔اسٹاک پر گہری نظر رکھنے والے مزمل اسلام نے ایک ویڈیو پیغام میں کہا کہ مارکیٹ میں بہت بے چینی ہے اور اس کی اہم وجہ حکومت کی جانب سے فنانشل ایڈوائز کا تقرر ہے ۔مارکیٹ کی خبر کے مطابق عقیل کریم ڈھیڈی، عارف حبیب کا کنسوشیم کو او جی ڈی سی ایل کی فروخت کے لیے منتخب کیا گیا ہے۔ او جی ڈی سی ایل میں حکومت کے 73فیصد شیئرز ہیں ۔ابھی کنسورشیم کا اعلان نہیں ہوا اوراس کا شیئرز مارکیٹ ریٹ سے پانچ فیصد کم آ گیا ہے،۔مارکیٹ میں یہ افواہ  جاری ہیں کہ یہ مارکیٹ ریٹ سے دس فیصد کم ریٹ پر ہو گا یعنی 125 تک ہو گا جبکہ مارکیٹ میں اس کے شیئرز کی قمیت 190 تک ہے۔

 

آئی ڈی: 2020/01/22/3433

متعلقہ خبریں

Leave a Comment