جج ویڈیو اسکینڈل: ایک اور ملزم انسداد دہشتگردی عدالت میں پیش

اسلام آباد: جج ویڈیو اسکینڈل میں گرفتار ایک اور ملزم کو انسداد دہشتگردی عدالت اسلام آباد میں پیش کر دیا گیا۔ دوران سماعت عدالت نے گرفتاریوں پر اظہارِ تشویش کر دیا ۔ عدالت نے  ایف آئی اے کو ملزم کا کیس سے تعلق ثابت کرنے کے لئے دو روز کی مہلت دیدی ۔

تفصیلات کے مطابق گرفتار ملزم رضا خان کو ایف آئی اے کی جانب سے انسداد دہشتگردی عدالت کے جج راجہ جواد عباس حسن کی عدالت میں پیش کیا گیا ۔ دوران ِسماعت جج راجہ جواد عباس حسن کا استفسار کیا کہ اس کو کہاں سے گرفتار کر کے لے آئے ہیں ۔ کس کس کو گرفتار کر رہے ہیں۔ کیسے ثابت کریں گے اس کا تعلق اشتہاری ملزم کے ساتھ ہے ۔

تفتیشی افسر عظمت نے بتایا کہ ملزم رضا خان اشتہاری ملزم میاں سلیم رضا کا اسسٹنٹ ہے ۔ اس پر فاضل جج نے کہا کہ یہ نہ ہو کل  آپ ملزم کے ڈرائیور کو گرفتار کر کے لے آئیں۔  ایف آئی اے کی جانب سے ملزم رضا خان کا 14 روزہ جسمانی ریمانڈ دینے کی استدعا کی گئی، جس پر عدالت نے 2 دن کا وقت دیا۔ فاضل جج نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ عدالت کو واضح کیا جائے کہ ملزم کا اس کیس سے کیسے تعلق بنتا ہے ۔

 

آئی ڈی: 2020/01/22/3947

متعلقہ خبریں

Leave a Comment