سندھ روشن پروگرام کیس؛ شرجیل میمن کی ضمانت میں توسیع

اسلام آباد: اسلام آباد ہائیکورٹ نے سندھ روشن پروگرام کیس میں شرجیل انعام میمن کی ضمانت میں 11فروری تک توسیع کر دی۔ چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیئے کہ نیب کا اختیار تحقیقات کرنا ہے لوگوں کو سزا دینا اور پیسے ریکور کروانا نہیں۔ شرجیل میمن کو کیوں گرفتار کرنا چاہتے ہیں۔ کیا زیر حراست انہیں مارنا ہے؟

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے سندھ روشن کیس میں شرجیل انعام میمن کی ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست پر سماعت کی۔ ان کے وکیل لطیف کھوسہ نے عدالت کو بتایا کہ نیب کی جانب ایک نیا وارنٹ گرفتاری جاری کیا گیا ہے۔ سندھ میں کچھ علاقوں میں بجلی نہ ہونے پر سولر پینل لگائے گئے۔ شرجیل میمن نے صرف پراجیکٹ کی سمری آگے بھیجی۔ اس کیس میں پہلے ہی انکوائری ہوچکی ہے۔ نیب 4 فروری 2019 سے انکوائری کر رہا ہے۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیئے کہ نیب کا اختیار تحقیقات کرنا ہے لوگوں کو سزا دینا نہیں۔ نیب پراسکیوٹر سے استفسار کیا کہ شرجیل انعام میمن کو کیوں گرفتار کرنا چاہتے ہیں۔ آپ کا کام تحقیقات کرنا ہے پیسے ریکور کروانا نہیں۔ کیا آپ نے زیر حراست ان کو مارنا ہے؟ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ آپ نے کہا پیسوں کی ریکوری کے لیے گرفتاری چاہتے ہیں، نیب کے پاس پیسوں کی ریکوری کے لیے کسی کو گرفتار کرنے کا اختیار نہیں۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے نیب پراسکیوٹر پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کسی کو سزا دینا کیا نیب کا کام ہے؟ نیب لوگوں کو سزائیں سنائے گا تو کیا ہم عدالتیں بند کر دیں۔ وکیل لطیف کھوسہ نے کہا کہ ہم نے نیب آرڈیننس کے تحت انکوائری ختم کرنے کی درخواست بھی دی ہے۔ شرجیل میمن منصبوے کی منظوری دینے والی کمیٹی کے رکن نہیں تھے۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ نیب کے پاس گرفتاری کا اختیار کتنا اور کن حالات میں ہے بار بار بتا چکے۔ گرفتاری کے دوران کوئی پلی بارگین پر راضی ہو تو وہ پلی بارگین نہیں ہو گا۔ ملزم پلی بارگین رضاکارانہ طور پر مکمل آزادی اور اپنی مرضی سے ہی کر سکتا ہے۔ نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ سپریم کورٹ کا فیصلہ موجود ہے، ضمانت نیب کیس میں ایسے نہیں ہو سکتی۔

چیف جسٹس نے نیب پراسکیوٹر کو اگلی سماعت پر سپریم کورٹ کا فیصلہ دوبارہ پڑھ کر آنے کی ہدایت کر دی۔ عدالت نے حکم دیا کہ تفتیشی افسر آئندہ سماعت پر گرفتاری کی ٹھوس وجوہات بتائیں۔ عدالت نے  شرجیل انعام میمن کی ضمانت میں 11 فروری تک توسیع کرتے ہوئے سماعت ملتوی کر دی۔

 

آئی ڈی: 2020/01/22/3975 

متعلقہ خبریں

Leave a Comment