افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کیس میں تیاری نہ ہونے پر سپریم کورٹ کسٹمز حکام پر برہم

Supreme Court of Pakistan

اسلام آباد: افغان ٹرانزٹ ٹریڈ سے متعلق کیس میں تیاری نہ کرنے پر سپریم کورٹ نے کسٹمز حکام پر برہمی کا اظہار کردیا۔ جسٹس عمرعطا بندیال نے استفسار کیا کہ چینی کی درآمد کیوں روکی؟ جسٹس فیصل عرب نے ریمارکس دیئے کہ آج کل چین میں ایک وائرس پھیلا ہوا ہے۔ کیا اس وجہ سے مال روک رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق جسٹس عمر عطا بندیال کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے سماعت کی۔ دوران سماعت  جسٹس عمر عطا بندیال نے ریمارکس دیئے کہ کسٹمز حکام کیس کی تیاری کر کے نہیں آتے۔ افغان ٹرانزٹ ٹریڈ رولزسے متعلق عدالت کو آگاہ نہیں کیا جا رہا۔ کیا بیماریوں کے خطرے کے باعث کنٹینرز کو روکا گیا۔ خطرناک اشیا کے علاوہ دیگر کی تجارت تو ہونی چاہئے۔ عدالت نے فریقین کو تیاری کرکے آنے کا حکم دیتے ہوئے سماعت ایک ہفتے کے لیے ملتوی کردی۔

واضح رہے کسٹمز حکام نے افغانستان سے چینی کے 354 کنٹینرز میں سے 298 روک لیے تھے۔ کسٹمز حکام نےہائیکورٹ کے فیصلے کےخلاف  سپریم کورٹ سےرجوع کر رکھا ہے۔

 

آئی ڈی: 2020/01/23/4018

متعلقہ خبریں

Leave a Comment