وفاقی حکومت کا 27 سرکاری املاک فروخت کرنے کا فیصلہ


اسلام آباد: وفاقی حکومت نے 27 سرکاری املاک فروخت کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ نجکاری کمیشن نے پراپرٹیز کی تفصیلات جاری کر دیں۔

حکومت کو پراپرٹیز کی فروخت سے ساڑھے 5 ارب روپے حاصل ہونے کی توقع ہے۔ دستاویزات کے مطابق وزارت تجارت و ٹیکسٹائل کی انڈسٹریل اسٹیٹ ملتان میں 15 ایکڑ اراضی فروخت ہو گی۔ وزارت صنعت و پیداوار کی لاہور میں ری پبلک موٹرز کی 42 کنال اراضی فروخت ہو گی۔ ایوی ایشن ڈویژن کی بورے والا میں 34 کنال اراضی فروخت کرنے کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے۔ ایوی ایشن ڈویژن کی رحیم یار خان میں 48 کنال اراضی فروخت کی جائے گی۔ ایوی ایشن ڈویژن کی نواب شاہ ائیر پورٹ کے قریب 40 کنال اراضی فروخت ہو گی۔ وزارت تجارت ٹیکسٹائل کی گوجرانوالہ میں ریلوے پھاٹک کے قریب ایک ایکڑ اراضی شامل ہے۔ وزارت تجارت و ٹیکسٹائل کی ہری پور میں 19 مرلہ اراضی فروخت کی جائے گی۔ وزارت تجارت و ٹیکسٹائل کی اسلام آباد کنٹری کلب میں 2 رینٹ ہاؤس فروخت کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ وزارت تجارت و ٹیکسٹائل کا سینٹورس مال اسلام آباد میں اپارٹمنٹ فروخت کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ وزارت تجارت و ٹیکسٹائل کی ایم ایم عالم روڈ لاہور ووگ ٹاور میں 3 دوکانیں، ایرا کی ملکیت شمع اپارٹمنٹس لاہور میں 9 فلیٹ، ایرا کی ملکیت اسلام آباد میں پی ایچ اے فاؤنڈیشن میں فلیٹ، وزارت آبی وسائل کے 2 کنال کا واپڈا ریسٹ ہاؤس سیدو شریف، وزارت آبی وسائل کے6 کنال 8 مرلہ کا واپڈا ریسٹ ہاؤس مانسہرہ اور وزارت آبی وسائل کی نکلسن روڈ لاہور پر 16 مرلہ کی عمارت بھی فروخت کرنے کا فیصلہ  کیا گیا ہے۔

حکام کے مطابق  حکومت نے کل 32 پراپرٹیز کی فروخت کرنے کیلئے نشاندہی کی تھی۔ اب حکومت نے پانچ پراپرٹیز کو فروخت کی فہرست سے نکال دیا۔


Leave A Reply

Your email address will not be published.