ریلوے خسارہ کیس: سارا کچا چٹھا ہمارے سامنے ہے۔ آپ کی انتظامیہ سے ریلوے نہیں چلے گی؛ سپریم کورٹ

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے ریلوے خسارہ کیس میں ادارے کو منافع بخش بنانے کا بزنس پلان طلب کر لیا۔ عدالت نے کراچی میں سرکلر ریلوے کی زمین دو ہفتوں میں خالی کرانے کا حکم دے دیا۔ پلان سے انحراف پرتوہین عدالت کی کارروائی ہوگی۔ سندھ حکومت کو تعاون کی ہدایت کی۔ چیف جسٹس نے وفاقی وزیرکو مخاطب کرتے ہوئے ریمارکس دیئے شیخ صاحب آپ کا ادارہ سب سے نااہل ہے اس کو درست کریں۔ یہ بابو بیٹھ کر صرف کرسیاں گرم کرتے ہیں۔ پروفیشنل لوگ لے کر آئیں، بابووں سے ٹرین نہیں چلے گی۔

چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے ریلوے خسارہ کیس کی سماعت کی ۔ چیف جسٹس گلزاراحمد نے وفاقی وزیرریلوے شیخ رشید پر برہمی کا اظہارکیا۔

چیف جسٹس  نے ریماکس دئے کہ منسٹر صاحب، بتائیں کیا کررہے ہیں۔ سارا کچا چٹھا ہمارے سامنے ہے۔ آپ کی انتظامیہ سے ریلوے نہیں چلے گی۔ آتش زدگی کے واقعے کا کیا بنا ، آپ کوتواستعفیٰ دے دینا چاہیے تھا۔

شیخ رشید نے آتشزدگی واقعہ میں 19افراد کو برطرف کرنے کا موقف اپنایا تو چیف جسٹس نے ریمارکس دے گزشتہ سماعت پربتایا گیا دولوگوں فارغ کیے گئے ، چھوٹے ملازمین کو فارغ کردیا، بڑے کب آئیں گے، وزیرریلوے نے بڑوں کو بھی نکالنے کی یقین دہانی کروائی تو چیف جسٹس بولے نظرتونہیں آرہا سب سے بڑے توشیخ صاحب آپ ہیں وزیرصاحب لوگوں کوخواب نہ دکھائیں، آج بھی اٹھارہویں صدی کی ریلوے چلا رہے ہیں محکمے میں لوٹ مارمچی ہوئی ہے 2020 میں بھی سارا نظام پرچیوں پرچل رہا ہے ، شیخ رشید نے 18 گھنٹے کام کرنے اور70 لاکھ مسافربڑھائے کا بتاتےہوئے کہاکہ نظام بائیومیٹرک کرنے جا رہے۔

پانچ سال میں ریلوے خسارہ ختم کردیںگے ، چیف جسٹس نے بھرتی پر سوال اٹھایا تو شیخ رشید نے بھرتیاں بند ہونے کا بتایا جس پر چیف جسٹس نے کہاکہ ڈیلی ویجز بھرتیاں ہوری ہیں افسر پیسے لیکربھرتیاں کر رہے ہیں ، سینئروزیر ہونے پرآپ کی وزارت توسب سے بہترین چلنی چاہیے لیکن ادارہ سب سے نااہل ہے، افسران کرسیاں گرم کررہے ہیں شیخ صاحبریلوے بابووں سے نہیں چلے گی عدالت نے وفاقی وزیرشیخ رشید سے بزنس پلان سے متعلق رپورٹ طلب کرتے ہوئے تنبیہ کی کہ عدالت میں پیش کردہ بزنس پلان سے انحراف ہوا توکاروائی کریںگے، عدالت نے وزیراورسیکرٹری پلاننگ کوآئندہ سماعت پرطلب کیا تو سندھ حکومت کو ریلوے سے معاونت کا حکم بھی دیا ، سماعت 12 فروری تک ملتوی کردی۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment