چودھری شوگر ملز بہت بڑا کارپوریٹ فراڈ ہے؛شہزاد اکبر

اسلام آباد: معاون خصوصی احتساب شہزاد اکبر کہتے ہیں کہ چودھری شوگر ملز بہت بڑا کارپوریٹ فراڈ ہے۔ شریف خاندان نے مختلف جگہ سے چودھری شوگر ملز کے لیے قرض لیا۔ چودھری شوگر ملز کرپشن اور کک بیکس کی لمبی داستان ہے۔ شیڈر ون جرسی کے نام سے ایک کمپنی میں مریم نواز کا بڑا کردار ہے، پوچھیں تو کہتی ہیں دادا جان کو پتہ ہوگا، پانامہ میں نام آنے کے بعد 45 فیصد شیئرز یوسف عباس کو منتقل کئے گئے۔

وزیراعظم کے معاون خصوصی شہزد اکبر نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ چودھری شوگر ملز بہت بڑا کارپوریٹ فراڈ ہے، شریف برادران نے اس کے ذریعے منی لانڈرنگ کی، شریف خاندان نے مختلف جگہ سے چودھری شوگر ملز کے لیے قرض لیا، کرپشن اور کک بیکس کی لمبی داستان ہے ۔۔۔ ماضی میں ملک میں رجحان رہا کہ پیسے کماوَ اورمزےکرو ۔۔۔ شریف خاندان نے چودھری شوگرملز کو منی لانڈرنگ کےلیے استعمال کیا ۔۔۔ شوگرملز کےلیے کافی پیسہ درکار ہوتا ہے ۔۔ شہبازشریف نے ابھی تک میرے سوالات کا جواب نہیں دیا۔

شہزاد اکبر نے کہا کہ شیڈر ون جرسی کے نام سے ایک کمپنی بنائی گئی، آف شور کمپنی بنا کر ڈیڑھ کروڑ ڈالر کا قرض لیا گیا، شیئرز پہلے نواز شریف پھر مریم نواز کے نام منتقل ہوئے، مریم نواز کا بڑا کردار ہے، پوچھیں تو کہتی ہیں دادا جان کو پتہ ہوگا، پانامہ میں نام آنے کے بعد 45 فیصد شیئرز یوسف عباس کو منتقل کئے گئے۔

معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ نیو اسلام آباد ایئرپورٹ کے ٹھیکے سے 5 کروڑ 60 لاکھ روپے چودھری شوگر ملز کے اکاؤنٹ میں آئے، شوگر ملز کے لیے 8 کروڑ روپے کا قرض لیا گیا، وزیر اعظم بننے کے بعد نواز شریف نے قرض معاف کرا لیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں