ناک کے ماسک اور قابل تلف دستانوں کا استعمال کرونا وائرس انفیکشن کے بچاؤ کے لئے ناگزیر ہیں؛ ڈبلیو ایچ او


اسلام آباد: این ڈی ایم اے نے حکومت سے ناک کے ماسک اور قابل تلف دستانوں کی ہر طرح کی برآمدگی پر پابندی کی تجویز دی ہے۔

ڈبلیو ایچ او کی گائیڈ لائنز کے مطابق ناک کیے ماسک اور قابل تلف دستانوں کا استعمال کرونا وائرس کے انفیکشن کے بچاؤ کے لئے ناگزیر ہیں۔ اس سلسلہ میں ایک مراسلہ تمام وفاقی وزارتوں اور صوبائی حکومتوں کو ارسال کیا گیا ہے۔ این ڈی ایم اے اور قومی ادارہ برائے صحت نے ائرپورٹ پر مسافروں کی سکرینگ کی ایک مشق کا اہتمام کیا ہے۔
ملک بھر کے تمام بین الاقوامی ائرپورٹس پر بارہ ہزار سے زائد مسافروں کی سکریننگ کرگئی ہے۔
این ڈی ایم اے اور قومی ادارہ برائے صحت نے کرنو وائرس سے بچاؤ کے لئیے ایک مربوط نظام تشکیل دیا ہے۔ تمام متعلقہ محکمہ جات کے درمیان کرنو وائرس کے حوالہ سے فوکل پوائنٹ اور ٹیلی فون نمبرز کا تبادلہ کیا گیا ہے۔ قومی ادارہ برائے صحت اور ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی الرٹس تمام صوبائی اور ریجنل ڈئزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹیز کو ضروری احتیاتی تدابیر اختیار کرنے کی ہدایات کے ساتھ ارسال کی گئی ہیں۔این ڈی ایم اے میں نیشنل ایمرجنسی کنڑول سینٹر صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہے۔
ترجمان این ڈی ایم اے کے مطابق تمام ممکنہ ذرائع بشمول اقوام متحدہ کے ادارے اور میڈیا کے ذریعے معلومات حاصل کی جا رہی ہیں۔


Comments are closed.