یو اےای میں غیرقانونی ملازمتوں کے لئے جعلی آفس اورویزوں پر مبنی کاروبارکا انکشاف


راولپنڈی: یو اے ای میں غیرقانونی ملازمتوں کے لئے جعلی آفس اورویزوں کی جعلسازی پر مبنی کاروبار کا انکشاف سامنے آیا ہے۔

یو اے ای میں پاکستانی قونصل جنرل نے خط میں انکشاف کیا ہے کہ قونصل جنرل کا خط ڈی جی ایف آئی اے اور ڈی جی بیورو آف امیگرانٹس کے نام جاری کیا گیا۔ جعلسازی میں ملوث 10پاکستانی کمپنیوں اور 13 ایجنٹس کی تفصیل بھی خط میں دی گئی ہے۔

خط میں تحریر کیا گیا ہے کہ ضعلی تقرر نامے اورجعلی منظوری پر مبنی ویزوں کے عوض مبینہ طور لاکھوں روپے وصول کئے جاتے ہیں۔ جعلی کمپنیوں کا مرکزی ایجنٹ منیر حیسن نامی شخص ہے۔ جعلی کمپنیوں میں لائل فورس سیکورٹی،النصر الحید ایل ایل سی،الفلک سیکورٹی ایل ایل سی شامل ہیں

این اے ایس سیکورٹی ایل ایل سینوکیا ٹیکنیکل سروسز،بحریہ سیکورٹٰی ایل ایل سی بھی جعلساز کمیاں ہیں۔ ریڈ فیلکن فیسلیٹی مینجمنٹ سروسز،جہلم ٹیکنیکل سروسز اور پیکجنگ ایجنٹس نامی کمپنیاں بھی جعلسازی میں شامل ہیں۔
کمپنیوں کےایجنٹس میں احسن رضا سید محمد،مصطفی مقدر،ظفرمسیح ابراہیم اور ملک نوید کے نام سامنے آئے ہیں۔ دیگر ایجنٹس میں نوید،عدنان،سہیل رحمان،عمران، فیضان خان،ماجد بٹ،ثاقب اور وسیم بھی شامل ہیں ۔ قونصل جنرل نے جعلساز کمپنیوں اور ایجنٹس کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔


Comments are closed.