مبینہ کرپشن میں ملوث پاکستان کسٹمز کے اعلی افسران کو عہدوں سے ہٹا دیا گیا

Pakistan-Customs-FBR-Scandal

اسلام آباد:وفاقی حکومت  نےمبینہ کرپشن میں ملوث پاکستان کسٹمز کے اعلی افسران کو عہدوں سے ہٹا دیا ہے۔

تفصیل کے مطابق ایف بی آر میں بڑے پیمانےپر تبادلے اور تقرریاں کی گئی ہیں ۔کسٹمز گروپ گریڈ 19 تا 22 کے 15 افسران کے تبادلے کر دیے گئے ہیں، جن میں ممبر کسٹمز آپریشنز جواد اویس آغا بھی شامل ہیں۔ نوٹیفیکشن کے مطابق گریڈ 21 کے جواد اویس آغا ممبر کسٹمز آپریشنز کے عہدے سے تبدیل کر کے او ایس ڈی کر دیا گیا ،جبکہ ان کی جگہ گریڈ 22 کے جاوید غنی کو ممبر کسٹمز آپریشنز کا اضافی چارج دیا گیا ہے۔ گریڈ 20 کے محمد سلیم کلیکٹر ایم سی سی اپریزمنٹ پشاور، گریڈ 20 کے خلیل ابراہیم کلیکٹر ایم سی سی پریونٹو پشاور،گریڈ 20 کے محمد یعقوب کو کلیکٹر ایم سی سی پریونٹر کوئٹہ جبکہ محمد یعقوب کو کو کلیکٹر ایم سی سی گوادر کا اضافی چارج بھی تفویض کیا گیا ہے۔

مزید براں گریڈ 20 کے عرفان الرحمن کلیکٹر ایم سی سی اپریزمنٹ کوئٹہ اور ڈی جی ٹرانزٹ ٹریڈ کوئٹہ کا اضافی چارج بھی دیا گیا ہے۔ اسی طرح گریڈ 20 کے فیاض انور کلیکٹر ایم سی سی پریونٹو ملتان،گریڈ 20 کے امتیاز شیخ کو ایم سی سی ایکسپورٹ کراچی، گریڈ 20 کے عرفان جاوید کو ڈائریکٹر آئی اینڈ آئی گوادر تعینات کیا گیا ہے ۔گریڈ 19 کے شاہد جان ایڈیشنل کلیکٹر ایم سی سی اپریزمنٹ پشاور تعینات کیا گیا ہے۔

دوسری جانب حکومت نے جواد آغا کے قریبی ساتھیوں بشمول ، گریڈ 20 کے احسن علی شاہ، افتخار احمد اور رضا کو چیف ایف بی آر ہیڈ کوارٹر تعینات کیاہے جبکہ گریڈ 19 کے ارباب قیصر حامد کو سیکرٹری ایف بی آر ہیڈ کوارٹر اسلام آباد تعینات کیا گیا ہے ۔

حکام کے مطابق کسٹمز کی انٹیلیجنس نے گزشتہ دنوں ایف بی آر چیرمین کو فیلڈ فارمیشنز میں جاری کرپشن کے حوالے سے رپورٹس دی تھی جس کے بعد وزیر اعظم نے ان افسران کو عہدہ سے فوری طور پر ہٹانے کی ہدایات کی تھی۔

 

آئی ڈی: 2020/02/01/4521

متعلقہ خبریں

Leave a Comment