سات سال تک اپنی جگہ سے نہ ہلنے والی ’اولم سلے مینڈر‘ دریافت


ہنگری: ہماری دنیا عجائب سے بھری پڑی ہے۔ ا ب تک سائنسدان جانوروں کی تمام اقسام کو دریافت کرنے سے قاصر ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ آئے دن کوئی نہ کوئی نیا جانور یا پرندہ دریافت ہوتا رہتا ہے۔

اب ماہرین نے بوسنیا ہرزیگووینا کے گہرے تاریک غاروں میں ایک ایسی چھپکلی نما سفید سلے مینڈر دریافت کی ہے جو سات برس سے اپنی جگہ سے نہیں ہلی۔ اس نابینا سلے مینڈر کو اولم کا نام دیا گیا ہے۔

یہ سلے مینڈرز بوسنیا ہرزیگووینا کے گہرے تاریک غاروں میں رہتی ہے۔ حال ہی میں غار میں آنے والے ماہرین نے ایک سلے مینڈر کو دیکھا جو لگ بھگ سات برس سے ایک ہی جگہ موجود ہے لیکن زندہ ہے۔ اول تو کوئی غار میں ان کا شکار نہیں کرتا دوم یہ کئی سال بغیر کھائے پئے زندہ رہ سکتے ہیں۔

ان سلے مینڈرز کے بارے میں یہ کہا جاتا ہے کہ یہ بہت کم حرکت کرتے ہیں اور ان سالوں میں ان کی نقل و حرکت 10 میٹر کے علاقے میں پائی گئی۔

ہنگری کی لورینڈ یونیورسٹی کے پروفیسر گرگلے بیلاز اور ان کے ساتھیوں نے غاروں میں ایک خاص تکنیک ’کیپچر-مارک-ری کیپچر‘ کے ذریعے ان سلے مینڈروں کی حرکات و سکنات کو مسلسل آٹھ برس تک نوٹ کیا ہے۔ اس تحقیق میں ایک سلے مینڈر کو نوٹ کرنے کا نتیجہ یہ نکلا کہ ان سات سالوں میں اس نے بالکل حرکت نہیں کی اور ایک ہی جگہ چپکی رہی۔

یہ سلے مینڈرز اپنی آب و ہوا اور ماحول میں تبدیلیوں کی وجہ سے معدومیت کے خطرے دوچار ہیں۔

یہ تحقیق جرنل آف زوالوجی میں شائع ہوئی ہے۔

 

آئی ڈی: 2020/02/05/4721

Leave A Reply

Your email address will not be published.