زیتون پراجیکٹ میں کرپشن؛ ایگریکلچر ریسرچ کونسل سے جواب طلب

اسلام آباد: وزارت قومی خوراک نے چیئرمین پاکستان ایگریکلچر ریسرچ کونسل سے کرپشن پر برطرف ہونے والے افسر کو بحال کرنے پر جواب طلب کر لیا۔

دستاویزات کے مطابق سیکرٹری وزارت قومی خوراک نے چیئرمین پاکستان ایگریکلچر ریسرچ کونسل کو خط لکھا ہے اور زیتون کے پودے برآمد کرنے کے معاملے میں کرپشن پر برطرف ہونے والے افسرسابق پراجیکٹ ڈائریکٹر ڈاکٹر ناصر محمود چیمہ کو وزیر اور سیکرٹری کے انکار کے باوجود کیسے بحال کیا گیا۔ خط میں عدالتی احکامات کو نظر انداز کرنے کے معاملے پر بھی وضاحت طلب کی گئی ہے۔ 2017 میں ایف آئی اے کے سپیشل انویسٹی گیشن یونٹ نے مقدمہ درج کر کے تحقیقات شروع کیں تھی۔ سابق پراجیکٹ ڈائریکٹر ڈاکٹر ناصر محمود چیمہ، سنیئر اکاونٹ آفیسر ساکت سلیم ملوث پائے گئے۔  چیئرمین پاکستان ایگریکلچر ریسرچ کونسل معاملے کو دبانے کےلئے کوشاں ہیں۔ اس لیے 30جنوری کو وزارت کی جانب سے لکھے گئے خط کا جواب تاحال التوا کا شکار ہے۔

واضح رہے کہ زیتون پراجیکٹ کے نام پر 15 کروڑ روپے زائد کی رقم قومی خزانے سے چرائی گئی۔  2015 میں میزان بینک لورالائی برانچ کے جعلی اکاونٹ میں رقم ٹرانسفر کی گئی۔ جبکہ ڈی جی این اے آر سی کی تشکیل کردہ کمیٹی میں 2016 میں الزامات کی تصدیق ہوئی تھی، جس کی بنا پر سابق پراجیکٹ ڈائریکٹر ڈاکٹر ناصر محمود چیمہ اور سنیئر اکاونٹ آفیسر ساکت سلیم کو نوکری سے فارغ کر دیا گیا تھا۔

 

آئی ڈی: 2020/02/08/4959

متعلقہ خبریں

Leave a Comment