ترک صدر طیب رجب اردوان کا پاکستانی پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے چوتھا خطاب

اسلام آباد: ترک صدر طیب رجب اردوان کاپاکستانی پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے چوتھا خطاب ،کسی بھی غیر ملکی سربراہ مملکت کا پاکستانی پارلیمنٹ سے سب سے زیادہ بار خطاب کرنے کا پارلیمانی ریکارڈ قائم ہوگیا۔ ترک صدر کا پارلیمان  آمدشاندار استقبال کیا گیا۔ حکومت اور اپوزیشن کے فرق کے بغیر پاکستانی پارلیمنٹ نے اعلان کردیا  کہ عالمی چینلجز کشمیر فلسطین اسلامو فوبیا سے نمٹنے کے لئے پاکستانی اور ترکی تیار ہیں۔ اس موقع پر سپیکر اسد قیصر نے کہا کہ  پاکستانی تحریک خلافت میں ترکوں کی مدد پر آج بھی فخر محسوس کرتے ہیں۔

مسلم دنیا کے عظیم اور سب سے مقبول حکمران رجب طیب اردوان نے پارلیمنٹ پہنچے تو ان کا ریڈ کارپٹ  استقبال کیا گیا ۔وزیر اعظم عمران خان سپیکر اسد قیصر اور چیئرمین سینٹ صادق سنجرانی نے ان کا استقبال کیا۔ جونہی وہ پارلیمنٹ ہاوس تشریف لائے تو ان کا شاندار استقبال کیا گیا۔ سپیکر اسد قیصر اور چیئرمین سینٹ صادق سنجرانی کی مشترکہ صدارت میں پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس ہوا ۔تلاوت اور نعت کے بعد دونوں ممالک کے ترانے بجائے گئے۔

سپیکر اسد قیصر نے استقبالیہ کلمات کہتے ہوئے ترک صدر کو خوش آمدید کہا اور انہیں عالم اسلام کی حقیقی آواز قرار دیا اور کہا پاکستان کے عوام تحریک خلافت میں حصہ لینے کے اپنے آباوواجداد کے اقدام پر آج بھی فخر کرتے ہیں۔

جب ترک صدر رجب طیب اردوان کو خطاب کے لئے سپیکر کی طرف سے دعوت دی گئی تو پورے ایوان اور مہمانوں کی گیلریوں میں موجود افراد نے کھڑے ہوکر ان کا استقبال کیا ترک صدر نے کہا پاکستان کا دکھ ترکی کا دکھ ہے ۔کشمیر ہمارے لئے وہی ہے جو پاکستان کے لئے ہے۔ ترک صدر کی تقریر کے دوران پوری پارلیمنٹ کے ارکان ڈیسک بجاکر ان کا شکریہ ادا کرتے رہے۔ رجب طیب اردوان نے کہا ترکی کے عوام تحریک خلافت میں برصغیر کے مسلمانوں کی قربانیوں کو بھولے ہیں نہ بھولیں گے۔

رجب طیب اردوان نے کہا مسلمان ایک جسم کی مانند ہیں اس جسم کو جہاں بھی درد ہوگا پورا جسم محسوس کرے گا۔ شام عراق فلسطین افغانستان کشمیر برما اور اسلاموفوبیا وہ چیلنجز ہیں جن سے امت مسلمہ کو مل کر نمٹنا ہے۔ رجب طیب اردوان نے کہا ترکی ایف اے ٹی ایف پر مکمل حمایت کرتا ہے۔

ترک صدر کے خطاب کے موقع پر غیر ملکی سفرا، چاروں صوبائی وزرائے اعلی ،گورنرز ،وزیر اعظم آزاد کشمیر ،سپیکرز آزاد کشمیر و گلگت بلتستان چیئرمین جوائنٹ چیفس سٹاف کمیٹی ندیم رضا، ائیر چیف مجاہد انور خان ،نیول چیف ظفر محمود عباسی سمیت مہمانوں کی بڑی تعداد گیلریوں میں موجود تھی۔

ترک صدر نے 26منٹ خطاب کیا ان کے خطاب کے اختتام پر ارکان پارلیمنٹ نے ایک بار پھر کھڑے ہوکر ترک صدر کا شکریہ ادا کیا۔

 

آئی ڈی: 2020/02/14/5145

متعلقہ خبریں

Leave a Comment