کورونا کے پیش نظر عمرہ کی ادائیگی بند ہونے مطاف کعبہ خالی ہو گیا


ریاض: کورونا وائرس کے خطرے کے پیش نظر سعودی حکومت نے اپنے شہریوں اور مملکت میں مقیم غیر ملکی افراد کے لیے بھی عمرہ ادائیگی پر عارضی طور پر پابندی عائد کر دی ہے۔ عمرہ کی ادائیگی بند ہونے کی وجہ سے خانہ کعبہ کی موجودہ صورت حال سامنے آ گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق کورونا وائرس کی وجہ سے مطاف اور باب جبرئیل کو بند کر دیا گیا ہے۔ خانہ کعبہ سے ملحق صحن میں بھی طواف کرنے پر پابندی لگا دی گئی ہے۔ گزشتہ دنوں مشرق وسطیٰ میں کورونا وائرس سے ہلاکتوں کے بعد سعودی عرب نے متاثرہ ملکوں کے عمرہ زائرین پرمکہ مکرمہ اور مسجد نبوی ﷺ میں داخلے پرپابندی عائد کردی تھی جس کے بعد ہزاروں افراد کے ویزے منسوخ کیے گئے تھے۔سعودی عرب میں کورونا وائرس کے پہلے مریض کی تصدیق ہوئی تھی جس کے بعد اب سعودی عرب نے مقامی افراد کے بھی عمرہ ادائیگی پر پابندی عائد کردی ہے۔سعودی وزارت داخلہ کی کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے اندرونِ ملک مقیم سعودی شہریوں اور غیر ملکیوں کے عمرہ کرنے پرعارضی پابندی عائد کردی گئی ہے جس کا وقتا فوقتا جائزہ لیا جائے گا۔

ان تصاویر پر سوشل میڈیا صارفین نے بھی جذباتی ردعمل کا اظہار کیا ہے۔ سوشل میڈیا صارفین کے مطابق ایسا پہلی بار دیکھا گیا ہے۔ اس موقع پر سوشل میڈیا صارفین دعا کی کہ یااللہ ہمیں گناہوں کی معافی دیدے اور ہمیں مختلف موذی امراض سے بچا۔

حال ہی میں مذہب کی طرف راغب ہونیوالی سابق اداکارہ رابی پیرزادہ نے اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ س وقت بجائے آپ خلیل اور ماروی پر جنگ کرنے اور میرا جسم میری مرضی جیسے بیہودہ پیغام پر بحث کرنے کہ اگر اللہ سے استغفار کریں تو بہتر ہے۔ اللہ کے عذاب سے ڈرو، خدارا مجھ گناہگار کی بات ہی سن لو۔ آج ہمیں اللہ کہ گھر جانے سے محروم کردیا گیا ہے۔کعبہ شریف پر طواف بند ہوگیا۔ میرے اللہ۔

آئی ڈی: 2020/03/05/6001

Leave A Reply

Your email address will not be published.