ذاتی وجوہات پر خاموش تھی، اگر آج بولوں گی تو کیا میڈیا دکھائے گا: مریم نواز

اسلام آباد: مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز صفدر نے کہا کہ ‘میں خاموش تھی جس کی بہت ساری وجوہات ہو سکتی ہیں، اگر آج میں بولوں گی تو کیا میڈیا دکھائے گا؟ جس پر ایک صحافی نے قدرے مسکراتے ہوئے کہا کہ ‘کوشش کریں گے’۔

مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے اسلام آباد میں شاہد خاقان عباسی سے ملاقات کے موقع پر کہا کہ ‘میرے والد لندن میں زیر علاج ہیں، دل چہرے اور الفاظ کا ساتھ نہ دے رہا ہو، بلکل غلط بات ہے’۔ انہوں نے کہا کہ ‘اگر کوئی یہ سمجھتا ہے کہ ڈرا دھمکا کر روک سکتا ہے تو وہ یہ جان لے کہ سولین بالادستی اور آئین کے ساتھ جو تعلق ہے پہلے زیادہ مضبوط ہوا ہے’۔ مریم نواز نے کہا کہ میرے والد علاج کے لیے لندن میں زیر علاج ہیں، میں نہیں چاہتی کہ میری وجہ سے ان کو تکلیف ہو۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ جب میری قیادت سمجھے گی اور ہدایت کرے گی میں آگے بڑھ کر اپنا کردار ادا کروں تو مجھے پیچھے نہیں پائیں گے۔

علاوہ ازیں میڈیا سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ‘انہوں نے کہا کہ مجھے میڈیا پر دکھانے پر پابندی ہے، خوف کا یہ عالم ہے، مجھے سے زیادہ میڈیا پابندیوں کی زنجیرمیں جکڑا ہوا ہے’۔ انہوں نے کہا مجھے میڈیا سے ہمدردی ہے، میڈیا جو دیکھنا چاہتا ہے وہ نہیں دیکھا سکتا، ماضی میں میڈیا پر اتنا برا وقت نہیں آیا۔ لندن میں زیر علاج مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف سے متعلق انہوں نے بتایا کہ سابق وزیراعظم کے دل کی ایک شریان 90 فیصد بند ہے۔ مریم نواز نے ان خبروں کی تردید کی کہ جس میں نواز شریف سے متعلق کہا گیا تھا کہ ‘نوازشریف نے مریم نواز کی لندن میں موجودگی کے بغیر علاج کرانے سے انکار کردیا’۔

مسلم لیگ (ن) نائب صدر نے واضح کیا کہ ‘نواز شریف نے صرف یہ کہا تھا کہ مریم نواز کی تاریخیں قریب ہیں، اس لیے تھوڑا انتظار کرلیتا ہوں’۔ مریم نواز نے کہا کہ ‘یقیناً والد صاحب کا دل کرتا ہوگا کہ گھر کے تمام افراد ان کے ساتھ ہوں کیونکہ میری والدہ کی رحلت کو زیادہ عرصہ بھی نہیں ہوا’۔ انہوں نے کہا کہ ‘بہن اور بطور مسلم لیگ (ن) کی ورکر کی حیثیت شاہد خاقان عباسی خراج تحسین پیش کرنے آئی ہوں کہ انہوں نے بغیر کسی الزام اتنی لمبی جیل کاٹی اور پارٹی نظریے پر قائم رہے’۔

اس سے قبل مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ تمام رکاوٹوں کے باوجود مریم نواز کا ایک بڑا مقام پاکستان کی سیاست میں ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ہم سب ملک کر مریم نواز کے شانہ بشانہ کام کریں گے، اصولوں پر قائم رہیں گے اور ملک میں آئین کی حکمرانی کے لیے ہماری جدوجہد جاری رہے گی۔ شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ مریم نواز کی خاموشی سے متعلق بہت سے سوالات جنم لیے، انہوں نے مسلم لیگ (ن) کے ورکرز کے دل میں جگہ پیدا کی، سیاست میں ایک مقام پیدا کیا۔ انہوں نے کہا کہ جب بھی پاکستان اور جماعت کو ضرورت ہوگی، مریم نواز کو اپنے ہمراہ پائیں گے۔

 

آئی ڈی: 2020/03/12/6367

متعلقہ خبریں

Leave a Comment