اسلام آباد ہائیکورٹ کا گرفتار افراد کی رہائی سے متعلق بڑا فیصلہ

اسلام آباد ہائیکورٹ نے آئی جی پولیس اور ڈپٹی کمشنر کو غیر ضروری گرفتار افراد کو فوری طورپر رہا کرنے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ نے 9 صفحات پرمشتمل قیدیوں سےمتعلق حکم نامہ جاری کردیا۔ حکم نامہ اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے جاری کیا ہے۔

ہائیکورٹ نے حکم دیا ہے کہ ڈپٹی کمشنر اسلام آباد ایک ذمہ دار افسر کو قیدیوں کی رہائی سے متعلق مقرر کریں، آئی جی پولیس اور ڈپٹی کمشنر غیر ضروری گرفتار کو فوری طور پر رہا کریں۔

حکم نامہ کے مطابق قیدیوں کی رہائی سےمتعلق سپریم کورٹ کی واضح ہدایات موجود ہیں، جوڈیشل افسر ویسٹ ڈی سی اسلام آباد کی معاونت کے لئےجج مقرر کریں اور متعلقہ جج اسلام آباد ہائیکورٹ کےحکم کےتحت ڈپٹی کمشنر کی رہنمائی کریں، اس متعلق ڈپٹی کمشنر 24 مارچ کو رپورٹ اسلام آباد ہائیکورٹ میں جمع کرائیں۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے حکم دیا ہے کہ قیدیوں کی رہائی سے پہلے اسکریننگ ضروری ہے، قیدیوں کی اسکریننگ کے لئےافسر مقرر کئے جائیں اور ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ ہائیکورٹ کےحکم کی پیروی کریں۔

حکم نامہ کے مطابق جن ملزمان کےٹرائل چل رہے ہیں انکوضمانت پررہاکیاجائے اور جن ملزمان کی شخصی ضمانت داخل ہو انہیں بھی ضمانت پر رہا کیا جائے۔ ڈپٹی کمشنر اسلام آباد حکم کی تعمیل کریں جب کہ متعلقہ ایس ایچ او ضمانت پر رہا ملزمان کا عوامی تحفظ کو یقینی بنائے۔

زیر سماعت کیسز کے ملزمان کو قانونی کارروائی کرکے رہا کیا جائے۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment