گھونگھوں سے محبت کرنے والی گھونگھا خاتون

 لندناگرچہ دنیا میں عجیب وغریب پالتو جانوروں کو پالنے کا رحجان بھی موجود ہے لیکن ایک خاتون نے گھونگھوں کو گود لینے کا فیصلہ کیا ہے اور اب تک 150 پالتو گھونگھے جمع کرکے ’ گھونگھا خاتون‘ کا اعزاز حاصل کرچکی ہیں۔

  پیپ اپالو برطانیہ سے تعلق رکھتی ہیں اور اپنے لیے ’کریزی اسنیل لیڈی‘ کا نام استعمال کرتی ہیں۔ ایک ڈاکیومینٹری میں وہ کہتی ہیں کہ دس سال قبل انہیں گھونگھوں سے محبت ہوگئی اور اب فیس بک ہو یا انسٹاگرام ان کی پوسٹس میں جگہ جگہ گھونگھے نظر آئیں گے۔ تاہم ان کے پاس خول والے گھونگھوں کی تعداد بہت زیادہ ہے۔

وہ کہتی ہیں کہ لوگوں کی اکثریت گھونگھوں کو سست، بے کار اور دماغ سے عاری کیڑے قرار دیتی ہے،  لیکن وہ پیچیدہ احساسات رکھتے ہیں اور فیصلہ کرنے کے علاوہ ان کی یادداشت بھی ہوتی ہے خواہ یہ بات سائنس سے ثابت ہوچکی ہے یا نہیں لیکن ان کے مطابق گھونگھوں کو ان سے بہتر کوئی اور نہیں جانتا۔

کئی اقسام کے گھونگھے ان کے گھروں میں موجود ہیں اور وہ دن میں کئی مرتبہ ان کے لیے مزیدار کھانے تیار کرتی ہیں۔ انہوں نے اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر گھونگھے پالنے، ان کی نسل خیزی اور دیگر ہدایات پر مبنی دستاویز بھی رکھی ہیں۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment