کورونا وائرس: پنجاب حکومت نے ہائیڈروآکسی کلوروکوئن سے علاج کی اجازت دے دی

پنجاب: ملیریا کی ادویات سے وائرس کے مریضوں کے علاج کی منظوری دے دی گئی۔
حکومت پنجاب نے کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کے لیے کلوروکوئن اور ہائیڈروآکسی کلوروکوئن سے علاج کرنے کی اجازت دے دی۔ ایک رپورٹ کے مطابق صوبائی حکومت نے دونوں ادویات کی 50 ہزار گولیوں کی خریداری کرلی ہے۔
واضح رہے کہ میوہسپتال نے وائرس کے متاثرہ مریضوں پر مذکورہ ادوایات کا استعمال شروع کیا تھا۔
اس سے قبل چین نے وائرس میں مبتلا تشویش ناک حالت کے حامل مریضوں کا علاج بھی اسی طرح کیا اورامریکا نے بھی اس کے استعمال کی اجازت دے دی ہے۔ حکومت کی جانب سے یہ فیصلہ امریکی فوڈ اینڈ ڈرگ اتھارٹی (ایف ڈی اے) کی جانب سے ہائیڈرو آکسی کلوروکوئن کے استعمال کی منظوری کے بعد کیا گیا تھا، جو اصل میں ملیریا کے علاج کے لئے استعمال ہوتا ہے۔ حکومت کی جانب سے یہ فیصلہ امریکی فوڈ اینڈ ڈرگ اتھارٹی (ایف ڈی اے) کی جانب سے ہائیڈرو آکسی کلوروکوئن کے استعمال کی منظوری کے بعد کیا گیا تھا جو اصل میں ملیریا کے علاج کے لیے استعمال ہوتی ہے۔
علاوہ ازیں حکومت نے شہر میں ٹو اور تھری اسٹار ہوٹل کرایہ پر لینے کا منصوبہ بنایا ہے تاکہ وہ اپنے کمروں کو کورونا وائرس کے مشتبہ مریضوں کو قرنطینہ کرسکیں۔ اس ضمن میں بتایا گیا کہ وائرس کے مشتبہ مریضوں میو ہسپتال اور ایکسپو سینٹر میں آؤٹ ڈور خدمات کی اجازت مل گئی۔ مذکورہ فیصلہ وائرس کے مریضوں میں اضافے کے پیش نظر لیا گیا۔ مریضوں کے انتظام کے لیے ایک ہزار بیڈ پر مشتمل ایکسپو سینٹر اسپتال بھی مکمل کرلیا گیا اور ایک ہزار 900 ڈاکٹروں، نرسوں اور پیرا میڈیکس کی بھرتی کے بعد جلد ہی کام شروع کردے گا۔

متعلقہ خبریں

Leave a Comment